الیکشن ٹریبونل نے سیف اللہ ابڑو کو سینیٹ انتخابات میں حصہ لینے سے روک دیا

آر او کے فیصلے کو کالعدم اور سیف اللہ ابڑو کو سینیٹ الیکشن کیلئے نااہل قرار دیا جائے، درخواستگزار
سیف اللہ ابڑو کیخلاف اعتراضات ثابت ہوئے، ٹیکنوکریٹ کے معیار پر پورا نہیں اترتے، ٹریبونل

کراچی (ویب ڈیسک)

الیکشن ٹریبونل نے سینیٹ انتخابات کیلئے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار سیف اللہ ابڑو کے کاغذات نامزدگی مسترد کر دیئے ۔ پیر کو الیکشن ٹریبونل نے سینیٹ الیکشن میں پی ٹی آئی رہنما سیف اللہ ابڑو کے کاغذات نامزدگی منظور ہونے کیخلاف غلام مصطفی میمن کی اپیل پر سماعت کی۔ درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ سیف اللہ ابڑو نے کاغذات نامزدگی میں اثاثے چھپائے، ان کے اثاثوں میں اچانک کئی گنا اضافہ ہوا، ریٹرننگ افسر نے سنے بغیر ہی سیف اللہ ابڑو کے کاغذات نامزدگی منظور کر لیے، ریٹرننگ افسر کے فیصلے کو کالعدم اور سیف اللہ ابڑو کو سینیٹ الیکشن کے لیے نااہل قرار دیا جائے۔الیکشن ٹریبونل نے ریٹرننگ افسر کا فیصلہ کالعدم دیتے ہوئے قرار سیف اللہ ابڑو کو سینیٹ انتخابات میں حصہ لینے سے روکنے کا فیصلہ جاری کیا۔ٹریبونل کا اپنے فیصلے میں کہنا تھا کہ سیف اللہ ابڑو کے خلاف اپیل میں لگائے گئے اعتراضات ثابت ہوئے ہیں۔ سیف اللہ ابڑو ٹیکنوکریٹ کے معیار پر پورا نہیں اترتے ہیں۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.