براڈ شیٹ نے پاکستان سے لوٹا گیا پیسہ واپس لانے کیلئے کچھ نہیں کیا، سابق چیئرمین نیب

براڈ شیٹ نے پاکستان سے لوٹا گیا پیسہ واپس لانے کیلئے کچھ نہیں کیا، سابق چیئرمین نیب

سابق پراسیکیوٹرجنرل نیب فاروق آدم خان کابیٹا براڈ شیٹ کے پارٹنر کیلئے کام کر رہا تھا

براڈ شیٹ نیب کی دی گئی معلومات کو ہی ہدف کیخلاف استعمال کرتارہا، جنرل(ر) امجدکابرطانوی عدالت میں دیا گیا بیان

اسلام آباد(ویب  نیوز)سابق چیئرمین نیب لیفٹیننٹ جنرل(ر)سید امجدنے کہا ہے کہ براڈشیٹ نے پاکستان سے لوٹا گیا پیسہ واپس لانے کیلئے کچھ نہیں کیا۔سابق چیئرمین نیب لیفٹیننٹ جنرل(ر)سید امجد کا برطانوی عدالت میں دیا گیا بیان سامنے آگیا ۔عدالت میں دیئے گئے بیان کے مطابق سابق چیئرمین نیب

 

لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ سید امجد نے کہا کہ سابق پراسیکیوٹرجنرل نیب فاروق آدم خان کابیٹا براڈ شیٹ کے پارٹنر کیلئے کام کر رہا تھا۔انہوں نے بتایا کہ براڈ شیٹ کے ساتھ معاہدہ متعلقہ وزارتوں سے منظوری کے بغیر کیا گیا، براڈ شیٹ نیب کی دی گئی معلومات کو ہی ہدف کے خلاف استعمال کرتا رہا، براڈشیٹ نے پاکستان سے لوٹا گیا پیسہ واپس لانے کیلئے کچھ نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ براڈشیٹ نیب کوکوئی مفید معلومات دے سکا نہ پیسہ واپسی میں مدد کرسکا، اپریل 2000  میں کولوراڈو امریکا میں براڈشیٹ کے دفتر کا دورہ کیا تھا۔لیفٹیننٹ جنرل(ر)سید امجد نے براڈ شیٹ کے دفتر کے دورے کے بعد ان سے معاہدہ کیا، دورے کے دوران پاکستانی وفد کو جعلی معلومات کی بنیاد پر پریزینٹیشن دی گئی تھیں۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.