بغیر پائیلٹ طیاروں کے استعمال ،امپورٹ اورتیار کرنے کے لئے پالیسی کا اجرا

 ان مینڈ ائیرکرافٹ سسٹم(UAS)کی پالیسی کا ڈرافٹ ایوی ایشن ڈویژن نے تیار کرکے اسٹیک ہولڈر زکوبھیج دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک)

وزارت ہوابازی نے بغیر پائیلٹ طیاروں کے استعمال ،امپورٹ اورتیار کرنے کے لئے باقاعدہ قانونی ضابطہ بنانے کی پالیسی کا اجرا کردیا،ان مینڈ ائیرکرافٹ سسٹم(UAS)کی پالیسی کا ڈرافٹ ایوی ایشن ڈویژن نے تیار کرکے اسٹیک ہولڈر زکوبھیج دیا۔منگل کووفاقی وزیرہوابازی غلام سرور خان کے جاری بیان میں کہاگیاکہ بغیر پائیلٹ طیاروں کے استعمال ،امپورٹ اورتیار کرنے کے لئے باقاعدہ قانونی ضابطہ بنانے کی پالیسی کا اجرا کیا جارہا ہے۔بغیر پائلٹ طیاروں کا نظام ہوابازی کے نظام میں ایک نیا جزو ہے۔ ان مینڈ ائیرکرافٹ سسٹم(UAS)(بغیر پائیلٹ فضاء نظام)کی پالیسی کا ڈرافٹ ایوی ایشن ڈویژن نے تیار کرلیا ہے۔اس پالیسی کا مقصد مختلف قسم کے بغیر پائیلٹ طیارے جس میں ڈرونز،ماڈل ائیر کرافٹ، کوارڈکاپٹر اور ہوائی غبارے شامل ہیں کی درجہ بندی کرنا اور آپریٹرز کے معیار اہلیت مقرر کرنا ہے۔اس پالیسی کا مسودہ اس سے متعلقہ تمام اسٹیک ہولڈرز کو رائے اور تجاویز کے لئے بھیج دیا گیاہے۔اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت ،نظرثانی اور فیڈبیک کے بعد موزوں فورم پر منظوری کے لئے پیش کیا جائے گا۔اس پالیسی میں وسیع پیمانے پر تفریحی ، غیر تفریحی، کھیلوں، فوٹوگرافی، میڈیا کوریج، تجارتی، زراعت اور بہت سے دوسرے حصوں میں ان مینڈ ائیر کرافٹ (یو اے ایس)کے استعمال کا احاطہ کیا گیا ہے۔ اس پالیسی کی تشکیل سے مقامی صنعت میں نئے منصوبوں کا آغاز ہوگا اور اس سے عام لوگوں اور بزنس کمیونٹی کے لئے اپنی کارکردگی کو بہتر بنانے کی حوصلہ افزائی ہوگی۔

Editor

Next Post

e-Paper – Daily Wifaq – Rawalpindi – 04-09-2020

جمعہ ستمبر 4 , 2020