بلوچستان ، ساڑھے تین کلومیٹر سرنگ میں چار کروڑ قدیم قرآن مجید محفوظ

بلوچستان ، ساڑھے تین کلومیٹر سرنگ میں چار کروڑ قدیم قرآن مجید محفوظ

سینیٹ قائمہ کمیٹی کو آگاہی۔ نجی طور پر یہ مقدس کام کیا گیا جہاں  پوری دنیا سے قرآن مجید آتے ہیں

دو بھائی ایسا کام کر سکتے ہیں تو وزارت مذہبی امور بھی بہتر کا م کر سکتی ہے۔ قائمہ کمیٹی

اسلام آباد (ویب  نیوز) سینیٹ کی  قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امورکوآگاہی دی گئی ہے کہ  بلوچستان میں ساڑھے تین  3.5کلومیٹر  کی سرنگ بنا کر تقریباً  چار کروڑ قدیم قرآن مجید  کے نسخے محفوظ  کر لئے گئے ۔ نجی طور پر یہ  مقدس کام کیا گیا ان کے پاس پوری دنیا سے قرآن مجید آتے ہیں اگر دو بھائی ایسا کام کر سکتے ہیں تو وزارت مذہبی امور بھی بہتر کا م کر سکتی ہے۔ پیر کو  قائمہ کمیٹی کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری کی زیر صدارت پارلیمنٹ لاجز میں منعقد ہوا اقلیتوں کے حقوق تحفظ کے ترمیمی بل 2020کا  بھی تفصیل سے جائزہ لیا گیا۔ محرک سینیٹر جاوید عباسی نے کہا کہ آئین میں آرٹیکل 20شامل ہے قانون نہیں بنایا گیا  ۔سیکرٹری وزارت مذہبی امور  نے بتایا کہ 18ویں ترمیم کے بعد بے شمار چیزیں صوبوں کو منتقل کر دیں ہیں۔ اقلیتوں کے تحفظ، ویلفیئر و دیگر اقلیتوں کے حوالے سے معاملات صوبے خود دیکھتے ہیں۔جبری مذہب کی تبدیلی کے معاملے کا جائزہ لینے اور تدارک کے  حوالے سے دونوں ایوانوں کے ممبران پر مشتمل سینیٹر انوار الحق کاکڑ کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ کسی بھی مذہب کے خلاف نفرت انگیز تقریریں کرنے پر تین سال سزا اور 50ہزار سے زائد جرمانہ ہو سکتا ہے۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ پاکستان میں اقلیتوں کو جتنی مذہبی آزادی حاصل ہے وہ دنیا کے کسی اور ملک میں نہیں ہے۔ موجودہ حکومت اقلیتوں کو عبادت گاہیں تک بنا کر دے رہی ہیں اگر کوئی بھی اقلیت اپنے مذہب کے متعلق تعلیمی ادارے بنائے تو کوئی پابندی نہیں ہے۔ قادیانی جو ختم نبوت کے منکر ہیں اور وہ 1973کے آئین میں غیر مسلم بھی قرار دیئے گئے ہیں وہ پارلیمنٹ کے فیصلے کو تسلیم نہیں کرتے اگر وہ خود کو غیر مسلم تسلیم کر لیں تو ان کو بھی دیگر اقلیتوں کی طرح ڈیل کیا جائے گا اور ہمارا جھگڑا ختم ہو جائے گا۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ تعلیمی نصاب میں اقلیتوں کے حوالے سے کوئی شکایت آج تک سامنے نہیں آئی۔ اقلیت کے لفظ کو آئین سے ہٹا کر پاکستانی کمیونٹی لکھا جائے۔ سینیٹر کشو بائی اورجان کنیتھ ولیمز نے کہا کہ بل اچھا ہے اس کو منظور ہونا چاہئے۔ اقلیتوں کو مزید تحفظ ملے گا۔ قائمہ کمیٹی نے  وزارت مذہبی امور کی رائے کے بعد کثرت رائے سے سے بل کو مسترد کر دیا ۔مسلم فیملی لاز اور گارڈین اینڈ ورڈز سے متعلق دو ترمیمی بلز کی متفقہ منظوری دے  دی ۔ سینیٹر فدا محمد کی جانب سے 25جنوری 2021کو سینیٹ اجلاس میں اٹھائے گئے عوامی اہمیت کا معاملہ برائے قرآنی آیات کو محفوظ کرنے کے میکنزم کے معاملات کا تفصیل سے جائزہ لیا گیا۔سیکرٹری وزارت مذہبی امور نے کہا کہ ایک میکنزم تجویز کیا گیا ہے جو جلد کابینہ میں منظور ی کیلئے پیش کیا جائے گا۔وفاقی دارلحکومت میں ایک ری سائیکلنگ پلانٹ لگایا جائے گا جس میں مقدس بوسیدہ  اوراق، سیاہی ہٹانے اور کاغذ علیحدہ ہو سکے گا۔ صوبوں کو بھی آگاہ کر دیا گیا ہے۔ کمیٹی کو بتایا گیا کہ قرآن مجید کی بے حرمتی کی سزا عمر قید ہے۔  سینیٹر فدا محمد نے کہا کہ لاہور میں 2013میں چار کروڑ روپے کی لاگت سے ریسائیکلنگ کا ایک منصوبہ بنایا تھا ابھی تک وہ قابل عمل نہیں ہوا وزارت مذہبی امور اس کا دورہ کر کے اسے قابل عمل بنائے۔ چیئرمین کمیٹی مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ قرآن مجید کی چھپائی اور غلطیوں سے پاک کی نگرانی کا موثر میکنزم ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اس مقدس مقصد کو مدنظر رکھتے ہوئے وزارت مذہبی امور چاروں صوبوں کا دورہ کر کے صوبائی حکومتوں کے ساتھ مل کر میٹنگ کرے ۔سینیٹر فدا محمد نے کہا کہ صوبہ بلوچستان میں دو بھائیوں نے 3.5کلومیٹر سرنگ بنا کر تقریبا  چار کروڑ قدیم قرآن مجید  کے نسخے محفوظ کئے ہیں۔ ان کے پاس پوری دنیا سے قرآن مجید آتے ہیں اگر دو بھائی ایسا کام کر سکتے ہیں تو وزارت مذہبی امور بھی بہتر کا م کر سکتی ہے۔

Editor

Next Post

بھارت: مالی بجٹ میں ہیلتھ کیئر کے شعبے میں دوگنا اضافہ، کسانوں کی حالت زار نظر انداز

منگل فروری 2 , 2021
بھارت: مالی بجٹ میں ہیلتھ کیئر کے شعبے میں دوگنا اضافہ، کسانوں کی حالت زار نظر انداز نئی دہلی (ویب  نیوز)بھارتی حکومت نے آئندہ مالی بجٹ میں صحت کی دیکھ بھال کے شعبہ کے لیے 30.6 بلین ڈالر مختص کیے ہیں۔ کووڈ کی عالمی وبا کی وجہ سے بھارتی معیشت […]