غزہ کے لاکھوں محصورین کو پھر بلیک میل کرنے کا منصوبہ

غزہ کے لاکھوں محصورین کو پھر بلیک میل کرنے کا منصوبہ

 کورونا ویکسین کی فراہمی روکنے اور دیگر طبی آلات کی فراہمی پرپابندی لگانے پر غور

مقبوضہ بیت المقدس (ویب  نیوز) اسرائیل نے غزہ کے لاکھوں محصورین کو پھر بلیک میل کرنے کا منصوبہ تیار کرنا شروع کردیا۔ اسرائیلی کنیسٹ کی خارجہ و سکیورٹی کمیٹی کے گذشتہ روز ہونے والے اجلاس میں غزہ کے علاقے میں کورونا ویکسین کی فراہمی روکنے اور دیگر طبی آلات کی فراہمی پرپابندی لگانے پر غور کیا گیا۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اسرائیلی حکومت غزہ کی پٹی میں کورونا ویکسین کی فراہمی صرف اس شرط پر یقینی بنانا چاہتی ہے کہ اس سے قبل غزہ میں جنگی قید بنائے گئے اسرائیلی فوجیوں کو بازیاب کرایا جائے۔رپورٹ میں کہا گیا کہ گذشتہ روز کنیسٹ کے اجلاس میں کہا گیا کہ غزہ کی پٹی میں اسلامی تحریک مزاحمت (حماس)کو کورونا ویکسین کے حصول سے اس وقت تک روکا جائے جب تک حماس یرغمال بنائے گئے اسرائیلی فوجیوں کو رہا نہیں کرتی۔ اس اجلاس میں یرغمالی فوجیوں ھدار گولڈن اور ارون شائول کے اہل خانہ کے کچھ افراد نے بھی شرکت کی۔ انہوں نے اجلاس میں حکومتی نمائندوں سے مطالبہ کیا کہ وہ غزہ کو کورونا ویکسین اور دیگر طبی آلات کی فراہمی اس وقت تک روکیں جب تک حماس قیدیوں کو رہا نہیں کر دیتی۔گولڈن خاندان کے ایک ذریعے نے بتایا کہ انہوں نے اسرائیلی سپریم کورٹ میں بھی ایک رٹ دائر کی ہے جس میں عدالت سے اپیل کی گئی کہ وہ غزہ کی پٹی کو کورونا ویکسین کی فراہمی اس وقت تک رکوائے جب تک غزہ میں جنگی قیدی بنائے گئے اسرائیلی فوجیوں کو رہا نہیں کیا جاتا۔یرغمالی فوجی ہدار گولڈن کی والدہ لیا نے کہا کہ اس کا بیٹا ”گیواتی”یونٹ میں تھا اور اسے ساڑھے چھ سال سے غزہ میں جنگی قیدی بنایا گیا ہے۔ اس نے اسرائیلی حکومت پر ھدار گولڈن اور دوسرے اسرائیلیوں کی رہائی میں ٹال مٹول اور غفلت برتنے کا بھی الزام عا ئد کیا۔

Editor

Next Post

بغیر قانون ای چالان کرنے پر حکومت کوشرم آنی چاہئے ،لاہور ہائیکورٹ

جمعہ جنوری 29 , 2021
بغیر قانون ای چالان کرنے پر حکومت کوشرم آنی چاہئے ،لاہور ہائیکورٹ  عدالت نے سیف سٹی اتھارٹی سے ای چالان کرنے کا عدالتی حکم طلب کرلیا قانون موجود نہیں تو ای چالان کیسے کیے جارہے ہیں؟ قانون کے بغیر ہی لوگوں سے رقم وصول کی جارہی ہے،جسٹس شمس محمود مرزا […]