کارکردگی نہ دکھانے پر سات سرکاری افسران کو شوکاز نوٹس جاری

ڈپٹی کمشنرز کو مراسلے، 833 افسران کو محتاط 111 افسران سے وضاحت طلب

عوامی شکایات کو بروقت حل نہ کرنے پر وزیر اعظم نے نوٹس لے لیا

43 اسسٹنٹ کمشنرز کو شوکازنوٹس،263افسران کو انتباہ

اسلام آباد (ویب ڈیسک)

  سات سرکاری افسران کو شوکاز نوٹس جاری کر دیئے گئے ،833 افسران کو محتاط جب کہ111 افسران سے وضاحت طلب کر لی گئی۔ سرکاری افسران کی جانب سے عوامی شکایات کو بروقت حل نہ کرنے پر وزیر اعظم نے نوٹس  لے لیا ۔43 اسسٹنٹ کمشنرز کو شوکازنوٹس،263افسران کو انتباہ کیا گیا ہے ۔ غیر سنجیدہ اور موثر کارکردگی نہ دکھانے والے سرکاری افسران کے خلاف ایکشن شروع کردیا گیا ہے ۔وزیراعظم آفس سے جاری اعلامیہ کے مطابق چیف سیکریٹری پنجاب نے ماتحت 1586 افسران کے ڈیش بورڈ کی جانچ پڑتال مکمل کر لی ہے ۔وزیراعظم پرفارمنس ڈیلیوری یونٹ کی رپورٹ وزیراعظم کو پیش کردی گئی ہے ۔263 افسران کو کارکردگی کی بنیاد پر وارننگ  جاری کردی گئی ہے ،7 سرکاری افسران کو شوکاز نوٹس جاری کر دیئے گئے ہیں ۔833 افسران کو محتاط رہنے کی ہدایت کی گئی ہے ، 111 افسران سے وضاحت طلب کر لی گئی ہے ۔وزیراعظم آفس403 سرکاری افسران کی کارکردگی کو سراہا گیا ہے ، وزیراعظم آفس کے مطابق سیکرٹری اطلاعات،زراعت،ایکسائز اور سیکرٹری آبپاشی کو کارکردگی بہتر کرنے کا مراسلہ جاری کردیا اگیا ہے۔وزیراعظم نے کابینہ اجلاس کے دوران سرکاری افسران کی ناقص کارکردگی کا نوٹس لیا تھا۔وفاقی وزرا نے بھی بیوروکریسی کے غیر سنجیدہ رویے کی شکایت کی تھی ۔ڈپٹی کمشنر لاہور، گجرات، شیخو پورہ سمیت پنجاب کے 20 ڈپٹی کمشنرز کو مراسلے جاری کر دیئے گئے ہیں۔ وزیراعظم نے ہدایت کی ہے کہ تمام افسران عوام کوبہتر سہولیات کی فراہمی کے لیے کارکردگی کو بہتر کریں۔اسسٹنٹ کمشنر رائیونڈ،لیہ،جھنگ ، بوریوالا، صادق آباد، ننکانہ صاحب، پنڈی گھیب، سمیت 43 اسسٹنٹ کمشنرز کو شوکازنوٹس جاری کر دئے گئے ۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.