کم آمدنی والے افراد کو قرضوں کی فراہمی کا باقاعدہ جائزہ لیا جائے ،عمران خان

کم آمدنی والے افراد کو قرضوں کی فراہمی کا باقاعدہ جائزہ لیا جائے ،عمران خان

کسی بھی پیش آنے والی رکاوٹ کو ترجیحی بنیادوں پر دور کیا جائے

راوی اربن ڈویلپمنٹ منصوبہ لاہور شہر کے مسائل حل کرنے  اور معاشی سرگرمیوں کے فروغ میں ایم سنگ میل ثابت ہوگا،وزیراعظم

اسلام آباد(ویب  نیوز)وزیرِ اعظم  عمران خا ن    نے گورنر سٹیٹ بنک اور چئیرمین نیا پاکستان ہاوسنگ اتھارٹی کو ہدایت کی کہ کم آمدنی والے افراد کو قرضوں کی فراہمی کا باقاعدہ جائزہ لیا جائے اور اس عمل میں کسی بھی پیش آنے والی رکاوٹ کو ترجیحی بنیادوں پر دور کیا جائے۔ یہ ہدایت انہوںنے اپنے زیر صدارت نیشنل کوارڈینیشن کمیٹی برائے ہاوسنگ، کنسٹرکشن و ڈویلپمنٹ  کے ہفتہ وار اجلاس میں دی،اجلاس میں ملک میں جاری تعمیراتی سرگرمیوں، بنکوں کی جانب سے ڈویلپرز، سرمایہ کاروں اور خصوصا کم آمدنی والے افراد کو ذاتی مکان کی تعمیر کے لئے آسان قرضوں کی فراہمی  اور تعمیرات سے متعلقہ دیگر معاملات کا جائزہ  لیا گیا۔گورنر سٹیٹ بنک  نے اجلاس کو بتایا کہ حکومت کی جانب سے اعلان کردہ مارک اپ سبسڈی کے حوالے سے محض چند ہفتوں میں اب تک آسان قرضوں کے لئے آٹھ ہزار سے زائد درخواستیں موصول ہو چکی ہیں  جن میں سے تقریبا دو ہزار کے قریب (1820)  منظور ہو چکی ہیں اور منظور شدہ قرضے کا حجم پانچ ارب روپے ہے۔سینئر صوبائی وزیر پنجاب  علیم خان نے اجلاس کو بتایا کہ بلڈرز اور ڈویلپیرز  اس امر کے معترف ہیں کہ تعمیرات کے لئے قرضے فراہم کرنے کے حوالے سے بنک نہایت متحرک کردار ادا کر رہے ہیں۔اجلاس کو بتایا گیا کہ ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ سٹیٹ بنک کی کاوشوں اور بنکوں کے تعاون سے کم آمدنی والے افراد کو ذاتی مکان کے لئے قرضوں کی فراہمی کے لئے یکساں اور اسٹینڈرڈ  درخواست فارم رائج کیا گیا ہے تاکہ آسان قرضوں کی فراہمی کے عمل کو آسان ترین بنایا جا سکے۔سیکرٹری ہاوسنگ نے اجلاس کو بتایا کہ وزارتِ ہاوسنگ نے بنک آف پنجاب اور الفلاح بنک سے مفاہمت کی یاداشت پر دستخط کیے ہیں جس کے تحت ان بنکوں کی جانب سے  طے شدہ شرح پر  گھروں کی تعمیر کے لئے قرض  فراہم  کیا جائے گا اور اس قرضے کے لئے رقم کی کوئی حد نہیں ہوگی۔ اس طرح اس عمل سے وہ لوگ بھی استفادہ حاصل کر سکیں گے جن پر مارک اپ سبسڈی سکیم کا اطلاق نہیں ہوتا۔ وزیرِ اعظم نے بنکوں کے متحرک کردار اور تعاون پر اطمینان کا اظہار کیا۔اجلاس میں اخوت کو فراہم کردہ رقوم کی بدولت کمزور ترین طبقات کو گھروں کی تعمیر میں معاونت فراہم کرنے کے حوالے سے مثبت نتائج کا جائزہ لیا گیا۔اس سے قبل وزیرِ اعظم نے  راوی اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ اور والٹن ائیرپورٹ پر سنٹرل بزنس  ڈسٹرکٹ  منصوبے کی پیش رفت کا جائزہ لیا۔وزیرِ اعظم کو بتایا گیا کہ پراجیکٹ کے حوالے سے منعقدہ سرمایہ کاروں کی کانفرنس میں اب تک پانچ بڑے سرمایہ کاروں کی جانب سے دلچسپی کا  باقاعدہ اظہار کیا جا چکا ہے۔ مزید دو سرمایہ کار کمپنیاں بھی اس منصوبے میں سرمایہ کاری  میں دلچسپی رکھتی ہیں اور ان کی جانب سے باقاعدہ طور پر اس  حوالے سے پیش رفت کی جا رہی ہے ۔وزیرِ اعظم کو منصوبے میں ترجیحات اقدامات اور ان میں اب تک کی پیش رفت پر تفصیلی بریفنگ دی گئی ،وزیرِ اعظم نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ راوی اربن ڈویلپمنٹ منصوبہ لاہور شہر کے مسائل حل کرنے  اور معاشی سرگرمیوں کے فروغ میں ایم سنگ میل ثابت ہوگا۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.