5 جی ٹیکنالوجی پر پابندی لگانے سے متعلق درخواست پر  پی ٹی اے حکام کو نوٹس جاری

5 جی ٹیکنالوجی پر پابندی لگانے سے متعلق درخواست پر  پی ٹی اے حکام کو نوٹس جاری

بتائیں، 5 جی کیسے مضر صحت ہے؟ بتائیں، کیا 5 جی کا کسی کو لائسنس دیا گیا ہے ؟عدالت کے ریمارکس

کراچی( ویب  نیوز)سندھ ہائیکورٹ نے 5 جی ٹیکنالوجی پر پابندی لگانے سے متعلق درخواست پر  پی ٹی اے حکام کو نوٹس جاری کردیے۔ پیر کو سندھ ہائی کورٹ میں 5 جی ٹیکنالوجی پر پابندی لگانے سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی۔ عدالت نے ریمارکس میں کہا کہ بتائیں، 5 جی کیسے مضر صحت ہے؟ بتائیں، کیا 5 جی کا کسی کو لائسنس دیا گیا ہے ؟۔ درخواست گزار کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ 5 جی کا باقاعدہ لائسنس کسی کو جاری نہیں ہوا۔ عدالت نے پی ٹی اے حکام کو نوٹس جاری کردیے۔ عدالت نے ریمارکس میں کہا کہ پی ٹی اے حکام وضاحت دے سکیں گے کیا کہ 5 جی کے مضر صحت اثرات ہو سکتے ہیں؟ پی ٹی اے کے جواب کے بعد ہی کارروائی آگے بڑھائیں گے، دنیا انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی میں آگے بڑھ رہی ہے اور ہم پابندی لگادیں؟۔ قبل ازیں دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ 5 جی ٹیکنالوجی انسانی صحت کے لیے مضر ہے، 5 جی کے تجربات سے اس کے خطرناک ہونے کے شواہد ملے، 5 جی ماحول اور اب و ہوا کے لیے بھی نقصان دہ ہے، 4 جی کے بھی نقصان تھے مگر وہ اتنا خطرناک نہیں، 5 جی پر پابندی لگائی جائے۔