کورونا وائرس، CAA کے اندرونِ ملک ایئر ٹرانسپورٹ کے قواعد جاری

کورونا وائرس، CAA کے اندرونِ ملک ایئر ٹرانسپورٹ کے قواعد جاری

مسافروں کے سوا کسی فرد کو بھی پارکنگ ایریا سے آگے جانے سے روکنے کی پابند ہو گی

کوئی شخص بغیر ماسک داخل نہیں ہو سکے گا، بورڈنگ برج اور ڈیپارچر لاونج میں سماجی فاصلہ یقینی بنانا ایئر پورٹ مینیجر کی ذمے داری ہو گی

کراچی(ویب ڈیسک )سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) نے کورونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے اندرونِ ملک شعبہ ایئر ٹرانسپورٹ کے قواعد جاری کر دیئے، یہ قواعد 31 دسمبر تک لاگو رہیں گے۔سی اے اے کے جاری کیئے گئے قواعد کے مطابق ایئرپورٹ سیکیورٹی فورس(اے ایس ایف) مسافروں کے سوا کسی فرد کو بھی پارکنگ ایریا سے آگے جانے سے روکنے کی پابند ہو گی۔پیسنجر ٹرمینل بلڈنگ میں کوئی شخص بغیر ماسک داخل نہیں ہو سکے گا، بورڈنگ برج اور ڈیپارچر لاونج میں سماجی فاصلہ یقینی بنانا ایئر پورٹ مینیجر کی ذمے داری ہو گی۔ایئر لائنز اور بریفنگ کاونٹر ہر مسافر کو سینیٹائزر فراہم کرنے کے پابند ہوں گے، تمام مسافر و عملہ دورانِ پرواز ماسک پہننے اور دیگر ایس او پیز پر عمل درآمد کے پابند ہوں گے۔مسافروں کی بورڈنگ سے پہلے جہاز کو ایس او پیز کے مطابق ڈس انفیکٹ کرنا لازمی ہو گا، ہر طیارے میں پی پی ایز کی موجودگی یقینی بنائی جائے گی۔کیبن کریو مسافروں کو ہر گھنٹے بعد ہینڈ سینیٹائزر دینے کا پابند ہو گا، ڈومیسٹک پرواز کے مسافروں کے لیے پروٹوکول کی پابندی ہو گی۔مسافر کے علاوہ دیگر افراد پر ایئر پورٹ سے لاونج میں جانے پر پابندی ہوگی، ایئر پورٹ کے تمام حصوں اور جہاز میں سوار تمام افراد پر ماسک کے استعمال کی شرط لازم ہو گی۔سی اے اے کی جانب سے جاری کیئے گئے قواعد میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ جہاز پر سوار ہوتے اور اترتے وقت سماجی فاصلے، ہینڈ سینی ٹائزر اور ماسک کا استعمال یقینی بنانا ہو گا۔

#/S

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.