سانحہ صفورا ودیگر کیسز میں میں سزائے موت پانے والے کالعدم تنظیم کے سعد عزیز عرف ٹن ٹن ودیگر کو50سال قید

کراچی (ویب ڈیسک)

عدالت نے طاہر حسین عرف منہاس کو نیوی کے کیپٹن کے قتل میں 25سال قید کا حکم دے دیا۔ انسداد دہشت گردی عدالت میں سماعت

انسداد دہشت گردی عدالت نے پاکستان نیوی کے کیپٹن اور پولیس اہلکار کے قتل کیس میں سانحہ صفورا میں سزائے موت پانے والے کالعدم تنظیم کے سعد عزیز عرف ٹن ٹن ودیگر پر جرم ثابت ہونے پر قتل کیدو مقدمات میں سعد عزیز عرف ٹن ٹن کو مجموعی طور پر 50سال قید کا حکم دے دیا۔ عدالت نے طاہر حسین عرف منہاس کو نیوی کے کیپٹن کے قتل میں 25سال قید کا حکم دے دیا۔ عدالت نے سعد عزیز کو مقتولین کے لواحقین کو5،5لاکھ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا بھی حکم دے دیا۔ عدالت نیطاہر منہاس کو 5لاکھ روپے ہرجانہ مقتول کے ورثا کو ادا کرنے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے حکم دیا ہے کہ مجرم سعد عزیز کو ہرجانے کی عدم ادائیگی پر 6سال اور طاہر منہاس کو 3سال قید بھگتا ہوگی۔ پیر کو انسداد دہشتگردی کی عدالت میں پاکستان نیوی کے کیپٹن اور پولیس اہلکار کے قتل کیس کی سماعت ہوئی۔ دوران سماعت عدالت کی جانب سے کیس کا فیصلہ سنایا گیا۔ عدالت نے جرم ثابت ہونے پر سانحہ صفورا میں سزائے موت پانے والے کالعدم تنظیم کے سعد عزیز عرف ٹن ٹن ودیگر پر جرم ثابت ہونے پر قتل کیدو مقدمات میں سعد عزیز عرف ٹن ٹن کو مجموعی طور پر 50سال قید کا حکم دے دیا۔ عدالت نے طاہر حسین عرف منہاس کو نیوی کے کیپٹن کے قتل میں 25سال قید کا حکم دے دیا۔ عدالت نے سعد عزیز کو مقتولین کے لواحقین کو5،5لاکھ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا بھی حکم دے دیا۔ عدالت نیطاہر منہاس کو 5لاکھ روپے ہرجانہ مقتول کے ورثا کو ادا کرنے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے حکم دیا ہے کہ مجرم سعد عزیز کو ہرجانے کی عدم ادائیگی پر 6سال اور طاہر منہاس کو 3سال قید بھگتا ہوگی۔ استغاثہ کے مطابق ستمبر 2013میں کیپٹن ندیم احمد پر حملہ کیا گیا ، حملے میں ندیم احمد ہلاک اور ان کی اہلیہ ڈاکٹر ٹیرسا احمد زخمی ہوگئی تھیں ،ملزمان نے 16اکتوبر 2014کو نیو کراچی میں پولیس اہلکار وقار حسن کو بھی فائرنگ کرکے قتل کیا ،ملزمان کو شاہراہ فیصل اور نیوکراچی تھانے میں درج مقدمات میں سزا سنائی گئی۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.