ترکی کا امریکی پابندیوں کے باوجود روس سے میزائل خریداری جاری رکھنے کا اعلان

ترکی روس کے ساتھ ایس 400دفاعی نظام کے حصول کا معاہدہ برقرار رکھے گا، ترجمان ترک صدر

امریکا نے روس سے ایس 400 میزائل خریدنے پر گزشتہ برس دسمبر میں ترکی پر پابندیاں عائد کردی تھی

انقرہ(ویب  نیوز)ترکی نے امریکی دبائو اور پابندیوں کے باجود روس سے میزائل خریداری کا معاہدہ جاری رکھنے کا اعلان کردیا ۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق صدر طیب اردوان کے ترجمان ابراہیم قالن نے کہا ہے کہ ترکی روس کے ساتھ ایس 400دفاعی نظام کے حصول کا معاہدہ برقرار رکھے گا اور اپنے نیٹو اتحادی ملک امریکا سے یہ معاملہ گفت و شنید سے حل کرنے کی کوشش جاری رکھی جائے گی۔واضح رہے کہ امریکا نے روس سے ایس 400میزائل خریدنے پر گزشتہ برس دسمبر میں ترکی پر پابندیاں عائد کردی تھیں جس پر ترکی کی جانب سے شدید ردعمل ظاہر کیا گیا تھا۔ اس حوالے سے منگل کو ترکی کے وزیر دفاع نے کہا کہ تھا کہ ترکی جزوی طور پر ایس 400دفاعی سسٹم کو فعال کررہا ہے جبکہ اس حوالے سے امریکا کے ساتھ مذاکرات بھی جاری ہیں۔ترکی کے نشریاتی ادارے سے بات کرتے ہوئے ابراہیم قالن کا کہنا تھا کہ وزیر دفاع کے بیان کو پوری طرح سمجھا نہیں گیا۔ انہون نے کہا تھا کہ جن امور پر اختلاف ہے ان پر بات چیت کی جائے گی تاہم کئی مسائل کا فوری حل متوقع نہیں ہے۔