تحریک لبیک کے خلاف کارروائی انسداددہشت گردی قانون کے تحت کی،عمران خان

تحریک لبیک کے خلاف کارروائی انسداددہشت گردی قانون کے تحت کی،عمران خان

مسلمان سب سے زیادہ پیار اوراحترام حضوراکرمۖ کا کرتے ہیں، ہم بے حرمتی برداشت نہیں کرینگے

 مغربی دنیا نے ہولوکاسٹ کے بارے میں کسی بھی منفی تبصرے پرپابندی لگائی ،اسی طرح توہین رسالت کر نیوالوں کیلئے یہی معیاراپنائیں،ٹویٹ

اسلام آباد( ویب نیوز)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ تحریک لبیک کے خلاف کارروائی انسداددہشت گردی قانون کے تحت کی، بیرون ملک اسلاموفوبیا اورنسل پرستی میں ملوث انتہا پسند سن لیں حضوراکرمۖ ہمارے دلوں میں بستے ہیں۔انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹرپرکہا کہ وہ عوام کویہ واضح کردیں کہ حکومت نے تحریک لبیک کیخلاف کارروائی انسداددہشت گردی قانون کے تحت کی۔وزیراعظم نے کہا کہ ٹی ایل پی کے خلاف کارروائی اس لیے کی کیونکہ انہوں نے ریاست کی رٹ کوچیلنج کیا اورسڑکوں پرتشدد کرنے سمیت عوامی اورقانون نافذ کرنے والوں پرحملہ کیا۔ اس تناظرمیں کوئی بھی قانون اورآئین سے بالاترنہیں ہوسکتا۔اس سے قبل وزیراعظم نے کہا کہ بیرون ملک اسلاموفوبیا اورنسل پرستی میں ملوث انتہا پسند سن لیں حضوراکرمۖ ہمارے دلوں میں بستے ہیں، بیرون ملک انتہا پسند ایک ارب 30 کروڑمسلمانوں کے جذبات کوٹھیس پہنچاتے ہیں، مسلمان سب سے زیادہ پیار اوراحترام حضوراکرمۖ کا کرتے ہیں، ہم بے حرمتی کو برداشت نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ مغربی دنیا نے ہولوکاسٹ کے بارے میں کسی بھی منفی تبصرے پرپابندی لگائی، مغرب سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ توہین رسالت کرنے والوں کے لیے یہی معیاراپنائیں، مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیزپیغامات پھیلانے والوں کے لیے بھی سزا کا یہی معیار ہونا چاہیے۔وزیر اعظم نے کہا کہ اہل مغرب آزادی اظہار رائے کی آڑ میں منافرت پھیلا رہے ہیں، مغرب میں رہنے والے انتہا پسند اپنے اس رویے پر ایک ارب30کروڑ مسلمانوں سے معافی مانگیں۔