پی ڈی ایم کے حالات بہت برے ہیں، شیخ رشید
مقتدر حلقوں کے ساتھ مولانا فضل الرحمن کے تعلقات خراب ہیں
میں نے پہلے کہا تھا مولانا فضل الرحمان کے ساتھ ہاتھ ہو جائے گا اب سب نے دیکھ لیا ہے
میں ساری زندگی مولانا کو بڑا سیاستدان سمجھتا رہا لیکن اب نہیں، میرا نہیں خیال کہ پیپلز پارٹی استعفے دے گی
شریف خاندان کبھی اکٹھا نہیں ہوا، وزیراعظم عمران خان نے مجھے کہا مریم نواز کے باہر جانے کا سوال ہی پیدا نہیںہوتا

اسلام آباد(ویب  نیوز)وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کے حالات بہت برے ہیں،میں نے پہلے کہا تھا مولانا فضل الرحمان کے ساتھ ہاتھ ہو جائے گا اب سب نے دیکھ لیا ہے،میں ساری زندگی مولانا کو بڑا سیاستدان سمجھتا رہا لیکن اب نہیں ،میرا نہیں خیال کہ پیپلز پارٹی استعفے دے گی۔ ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میں نے کہا تھا کہ اپوزیشن والے اپنے مفادات کی خاطر اکٹھے ہیں یہ الگ الگ جماعتوں کے لوگ ہیں ان کے نظریات الگ سوچ جدا ہے۔ مولانا کے ساتھ ہر بار ہاتھ ہو جاتا ہے اب انہیںسمجھ جانا چاہیے۔ مقتدر حلقوں کے ساتھ مولانا فضل الرحمن کے تعلقات خراب ہیں۔ شیخ رشید نے کہاکہ شریف خاندان کبھی اکٹھا نہیں ہوا۔ میں جب شہباز شریف کاکام کرتا تھا تو نواز شریف پوچھتے تھے، شہباز شریف نے نواز شریف کے ساتھ سعودی عرب جانے سے انکارکیا تھا میں نے ن لیگ سے ش نکلنے کا کہاتھا مذاق اڑایا گیا آج بھی اپنی بات پر قائم ہوں، شہباز شریف ہی نواز شریف کو سعودی عرب سے واپس لایا تھا۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان نے مجھے کہا مریم نواز کے باہر جانے کا سوال ہی پیدا نہیںہوتا۔ وزیر داخلہ نے کہاکہ کورونا پھر آگیا ہے ہمیں بہت احتیاط کی ضرورت ہے۔ اللہ وزیراعظم کو صحت دے۔ ملک میں سرمایہ کاری لانے اور معاشی حالات بہتر بنانے کیلئے وزیراعظم سے جتنی محنت ہوسکتی ہے وہ کررہے ہیں۔ وزیراعظم نے کئی اجلاسوں میں کہاکہ وقت کم ہے اور مقابلہ سخت ہے۔ ہمیں بھی محنت کرنی چاہیے۔ عوام وزیراعظم کے ساتھ ہیں 11 جماعتیں اکٹھے ہونے کے باوجود عوام نے نوٹس نہیں لیا اوروزیراعظم کے ساتھ کھڑی رہی۔ شیخ رشید نے کہاکہ اپوزیشن میں دن نہیں گزرتے جبکہ حکومت میں وقت تیزی سے گزر جاتا ہے ۔ شیخ رشید نے کہاکہ انتخابی اصلاحات بہت ضروری ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عبدالغفور حیدری نے سیاسی مذاق کوسنجیدہ لے لیا تھا۔