بیرون ممالک سے پاکستان آنے والے مسافروں کیلئے ایڈوائزری جاری، پاکستان میں ائر ٹریفک کو 20 فیصد تک محدود رکھنے کا فیصلہ

پاکستان آنے والی ائر ٹریفک کو 80 فیصد تک کم کرنے کی ہدایت کی گئی، این سی او سی

اسلام آباد (ویب ڈیسک)

کورونا وائرس کی بگڑتی صورتحال کے پیش نظر بیرون ممالک سے پاکستان آنے والے مسافروں کے لیے ایڈوائزری جاری کر دی گئی ۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(این سی او سی) نے پاکستان آنے والی ائر ٹریفک کو 80 فیصد تک کم کرنے کی ہدایت کی ، بیرون ملک سے پاکستان میں ائر ٹریفک کو 20 فیصد تک محدود رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ این سی او سی نے وزارت خارجہ، داخلہ، سول ایوی ایشن سمیت تمام صوبائی چیف سیکرٹریز کو اس سلسلے میں مراسلہ ارسال کر دیا۔ مراسلے کے مطابق بیرون ممالک سے پاکستان آنے والے مسافروں کے لئے ایڈوائزری جاری کردی گئی۔ فضائی سفر محدود رکھنے کی پابندیاں 5سے 20 مئی تک نافذ العمل رہیں گی۔این سی او سی کے مطابق 18 مئی کو موجودہ پابندیوں کے منصوبے کا ازسرنو جائزہ لیا جائے گا جبکہ پاکستان آنے والے مسافروں کو 72 گھنٹے قبل پی سی آر منفی ٹیسٹ رپورٹ دکھانا لازم ہو گا۔مسافروں کی پاکستان آمد پر ائرپورٹ پر دوبارہ پی سی آر ٹیسٹ کیا جائے گا اور این ڈی ایم اے انٹرنیشنل ائرپورٹس پر پی سی آر ٹیسٹ کٹس کی فراہمی یقینی کی پابند ہو گی۔مسافر ٹیسٹ منفی ہونے پر 10 دن قرنطینہ کرنے کے پابند ہوں گے جبکہ مثبت رپورٹ پر مسافر کو ضلعی انتظامیہ کے زیر انتظام قرنطینہ سینٹر بھیجا جائے گا۔بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کی فاسٹ ٹریک ایپ میں رجسٹریشن لازمی قراردی گئی ۔ ملک بدر کیے گئے پاکستانی فاسٹ ٹریک ایپ کی رجسٹریشن سے مستثنیٰ ہوں گے،این سی او سی نے سول ایوی ایشن اور پی آئی اے کو ریوائزڈ ائر ٹریفک پلان بنانے کی ہدایت کر دی جبکہ تمام انٹرنیشنل ائر پورٹس پر محکمہ صحت کے عملہ کی 24 گھنٹے موجودگی کو یقینی بنایا جائے گا۔ایوی ایشن ڈویژن اور ائر پورٹ مینجمنٹ ٹیسٹنگ کے لیے محکمہ صحت کو سہولیات فراہم کریں گے.