بی جے پی انتہاپسند، تنگ نظر اور انتہائی متعصبانہ سوچ پر مبنی آر ایس ایس کے زیر اثرہے شہبازشریف

لاہور (صباح نیوز)

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہبازشریف نے بے جی پی حکومت کی سرپرستی میں بھارت میں اسلام اور مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز مہم وتشدد کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی انتہاپسند، تنگ نظر اور انتہائی متعصبانہ سوچ پر مبنی آر ایس ایس کے زیر اثرہے ۔بے جی پی ریاستی قوت کا اقلیتوں بالخصوص مسلمانوںکے خلاف بڑی بے رحمی سے ناجائز اور غیرمنصفانہ استعمال کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت میں برسراقتدار گروہ دراصل مسلمان آبادی اور دیگر کمزور اقلیتوں کی نسل کشی کے مذموم ایجنڈے پر کاربند ہے۔بابری مسجد کی شہادت، گجرات میں مسلمانوں کا قتل عام، سمجھوتہ ایکسپریس، شہریت ایکٹ بھارتی مجرمانہ سوچ کی چند نمایاں مثالیںہیں۔انہوں نے کہا کہ ایک منظم اور سوچی سمجھی حکمت عملی کے تحت اب کورونا عالمی وباء کے پھیلاو کا ذمہ دار مسلمانوں کو قرار دیاجارہا ہے۔مسلمانوں کی عبادت گاہوں، مذہبی آزادیوں کے بعد ان کی زندگی کو نشانہ بنایاجانا معمول بن چکا ہے۔انہوں نے کہا کہ مودی حکومت انسانی زندگی کی حرمت پامال کرکے ہٹلر کے راستے پر کاربند ہے،ہٹلر کا نشانہ یہودی تھے تو آج مودی کا نشانہ مسلمان ہیں۔ اقوام متحدہ، سلامتی کونسل، عالمی برادری، عالمی انسانی حقوق کی تنظیمیں مسلمانوں پر ظلم رکوائیں۔عالمی برادری بھارت کے اندر پرامن اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کا قتل عام رکوانے کے لئے بھارتی حکومت پر دباو ڈالے ۔انہوں نے کہا امریکہ، برطانیہ، یورپ، مہذب دنیا بنیادی انسانی احترام اور مذہبی آزادیوں کی عالمی اقدار کی پامالی پربھارت کے خلاف اقدامات کریں ۔امریکہ، برطانیہ، برطانوی پارلیمان، کویت اور ایران کی بھارت کے اندر اسلام اور مسلمانوں کے خلاف نفرت کی مہم روکنے کے مطالبے کی تائید وحمایت کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ او۔آئی۔سی کی بھارت میں جاری نفرت انگیز مہم کی مذمت کے بیان کا خیرمقدم کرتے ہیں۔او آئی سی اسلامی دنیا کی نمائندہ آواز کے طورپر بھارتی حکومت کے ساتھ باضابطہ یہ معاملہ اٹھائے۔او۔آئی۔سی کے پلیٹ فارم کے ذریعے عالمی اداروں میں بھارتی اقدمات کو اٹھایا جائے ۔بھارت سے کہاجائے کہ شہریت ایکٹ سمیت دیگر متعصبانہ اقدامات کے خاتمے کا اعلان کرے ۔مسلمانوں کے بنیادی انسانی حقوق کی پاسداری او آئی سی کے منشور کا بنیادی نکتہ ہے۔انہوں نے کہا کہ مجھے امید ہے کہ او۔آئی۔سی اس ضمن میں متفقہ لائحہ عمل مرتب کرکے جلد عملی اقدامات اٹھائے گی۔بھارت کے اندررہنے والی تمام اقلیتوںبالخصوص مسلمانوں کے ساتھ یک جہتی کا اظہار کرتے ہیں۔ان کے مسلمہ عالمی بنیادی انسانی اور قانونی حقوق کے لئے پوری قوت سے آواز بلند کرتے رہیں گے

Editor

Next Post

حکومت نے گلگت بلتستان کیلئے قانون سازی کیوں نہیں کی؟ سپریم کورٹ

منگل اپریل 28 , 2020
اسلام آباد(صباح نیوز) سپریم کورٹ نے گلگت بلتستان  میں عام انتخابات کیلئے وفاقی حکومت کی درخواست سماعت کیلئے منظور کرلی ہے اور ایڈوکیٹ جنرل گلگت بلتستان کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا ہے ۔چیف جسٹس گلزا ر احمد کی سربرا ہی میں سات رکنی لارجر بینچ نے کیس کی […]