وزیر اعظم سے ایم کیو ایم کے وفد کی ملاقات؛ مختلف معاملات پر تحفظات کا اظہار

اسلام آباد (ویب ڈیسک)

ایم کیو ایم پاکستان کی اعلیٰ قیادت نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کے دوران مختلف امور پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

اسلام آباد میں ایم کیو ایم کے اعلی سطح وفد نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی۔ ایم کیو ایم کے وفد میں کنونئیر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی ، وفاقی وزیر امین الحق اور حیدر عباس رضوی شامل تھے جب کہ اس موقع پر وفاقی وزرا اسد عمر، علی زیدی اور گورنر سندھ عمران اسماعیل بھی ملاقات میں شریک تھے۔ صوبائی رکنِ اسمبلی سندھ حلیم عادل شیخ، کنور نوید جمیل نے بھی شرکت کی۔

ملاقات کے دوران ملک اور صوبہ سندھ کی مجموعی سیاسی صورتحال اور کراچی پیکج سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ خالد مقبول صدیقی نے وزیراعظم عمران خان کے سامنے لاپتہ کارکن ، سیاسی دفاتر کی واپسی، کراچی پیکیج اور ترقیاتی کاموں میں تاخیر کا معاملہ اٹھا دیا۔

ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال کے ساتھ ساتھ سینیٹ انتخابات پر تفصیلی گفتگو کی گئی۔ جس میں متحدہ اراکین نے سینیٹ انتخابات میں مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی۔

وزیراعظم نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان ہماری اہم اتحادی ہے، وزیراعظم نے ہدایت کی لاپتہ کارکنان اور ایف آئی آر کے حوالے سے وزارت داخلہ معاملے کو دیکھ کر آئین و قانون کے تحت اپنا کردار ادا کرے جب کہ کراچی پیکج اور ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے مشاورت میں ایم کیو ایم کو بھی شامل رکھا جائے گا۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.