بیت لحم ،یہودی آباد کاروں نے فلسطینی کا باغ اجاڑ دیا

آبادکاروں نے الیکٹرک آری سے زیتون کے 70 پھل دار پودے کاٹ ڈالے

بیت لحم  (ویب ڈیسک)

یہودی آباد کاروں کے ایک گروپ نے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمال مغربی علاقے الوجہ میں فلسطینیوں کے زیتون کے باغ کو اجاڑ دیا ۔مقامی فلسطینی سماجی کارکن ابراہیم عوض اللہ نے بیان میں بتایا کہ یہودی آباد کاروں نے فوزی خلیفہ شہری کے باغ میں گھس کرالیکٹرک آری کی مدد زیتون کے 70 پھل دار پودے کاٹ ڈالے۔ یہ باغ بیت لحم میں عروق زنید کے مقام پر واقع ہے اور کاٹے گئے درختوں کی عمر 10 سے15 سال کے درمیان تھی۔عوض اللہ نے بتایا کہ یہودی آباد کاروں کی جانب سے فلسطینیوں کی املاک کی مسماری، اراضی پرقبضے اور قیمتی درختوں کے باغات کو تباہ کرنا روز کا معمول بن چکا ہے۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.