پی ڈی ایم کا غیر فطری اتحاد انجام کو پہنچ چکا ،عثمان بزدار

پی ڈی ایم کا غیر فطری اتحاد انجام کو پہنچ چکا ،عثمان بزدار
پی ڈی ایم کو اب انتشار کی سیاست چھوڑ کر ہوش کے ناخن لینے چاہئیں
وزیراعلیٰ کی امین اسلم ، راجہ ریاض ،خرم شہزاد اور نصراللہ گھمن سے ملاقات میں گفتگو

لاہور (ویب  نیوز)وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کا غیر فطری اتحاد اپنے انجام کو پہنچ چکا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب سے وزیراعظم کے معاون خصوصی ملک امین اسلم اور اراکین قومی اسمبلی راجہ ریاض، خرم شہزاد اور رضا نصر اللہ گھمن نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور، حلقوں کے مسائل اور ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ عثمان بزدار نے اراکین قومی اسمبلی کو ان کے حلقوں کے مسائل حل کرنے کی یقین دہانی کرائی۔اس موقع پر عثمان بزدار نے کہا کہ اراکین صوبائی اسمبلی کی طرح قومی اسمبلی کے اراکین بھی میرے ساتھی ہیں، ترقیاتی منصوبوں میں منتخب نمائندوں کی مشاورت شامل ہے، حلقوں کے مسائل حل کرنا اور جاری ترقیاتی سکیموں کی جلد تکمیل اولین ترجیح ہے، ہر ضلع کا علیحدہ ڈویلپمنٹ پیکیج تیار کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں نے اضلاع کے دورے شروع کر دیئے ہیں، جلد فیصل آباد اور اٹک کا دورہ کروں گا، تحریک انصاف کی حکومت نے سابق دور کی خرابیوں کو درست کیا ہے، ماضی میں قومی وسائل کو نمائشی منصوبوں کی نذر کر کے ملک و قوم سے ظلم کیا گیا، سابق حکمرانوں نے عوام کے بنیادی مسائل کو یکسر نظر انداز کیا۔انہوںنے مزید کہا کہ حکومت نے عوام کے بنیادی مسائل کے حل پر توجہ مرکوز کی ہے، تحریک انصاف کی حکومت تمام علاقوں کی یکساں ترقی پر یقین رکھتی ہے، نیا پاکستان عام آدمی کا پاکستان ہے، مختصر عرصے میں مختلف شعبوں میں اصلاحات کر کے نئی مثال قائم کی ہے، ہم نعروں پر نہیں عمل پر یقین رکھتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اللہ نے خدمت خلق کا جو موقع عطا کیا ہے، اسے عبادت سمجھ کر نبھا رہے ہیں، وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں پاکستان اپنا اصل مقام حاصل کرے گا، تحریک انصاف کی حکومت نے مختصر عرصے میں عوام کی فلاح و بہبود کیلئے متعدد اقدامات کیے ہیں، عوام کی خدمت کا ایجنڈا لیکر آئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن نے پاکستان کے مفادات کو دائو پر لگانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی، عوام میں منفی سیاست کرنے والوں کی ساکھ ختم ہوچکی ہے،اپوزیشن نے جو بویا وہی کاٹ رہے ہیں،پی ڈی ایم کا غیرفطری اتحاد اپنے انجام کو پہنچ چکا ہے ، پی ڈی ایم کو اب انتشار کی سیاست چھوڑ کر ہوش کے ناخن لینے چاہئیں۔