ماضی میں ٹکٹس دینے میں بڑی بڑی غلطیاں کیں،وزیر اعظم عمران خان

ماضی میں ٹکٹس دینے میں بڑی بڑی غلطیاں کیں،وزیر اعظم عمران خان

 ٹکٹ دینے میں غلط فیصلے پراکثرسوچتارہتاہوں کہ کسے وزارت دینی چاہیے تھی اور کسے ٹکٹس دینے چاہئیں تھے

ہمارے سابق حکمرانوں کے بچے اور جائیدادیں باہر ہیں، ملک سے پیسہ باہر لے جانے والے بڑے غدار ہیں، تقریب سے خطاب

 گلگت بلتستان کی ترقی کیلئے 370 ارب روپے خرچ کیے جائیں گے،اسد عمر

گلگت (ویب  نیوز)وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ماضی میں ٹکٹس دینے میں بڑی بڑی غلطیاں کیں اور اکثر اس حوالے سے خیال آتا ہے کہ کسے وزارت دینی چاہیے تھی اور کسے ٹکٹس دینے چاہیے تھے۔گلگت میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ قرضوں کی قسطیں دینے کی وجہ سے بہت کم وسائل ہوتے ہیں اور ہر جگہ سے مطالبہ ہے پیسوں کا تاہم گلگت بلتستان کے لیے اس طرح کا پیکج ایک بہت بڑا کارنامہ ہے،اسد عمرکوجی بی  پیکیچ کے لئے خراج تحسین پیش کرتا ہوں،پہلی مرتبہ 15 سال کی عمر میں گلگت بلتستان آیا تھا، ان دنوں سڑکیں ایسی تھیں کہ وہاں کہ مقامیوں کے علاوہ دنیا کا کوئی ڈرائیور وہاں گاڑی نہیں چلا سکتا تھا۔انہوں نے کہا کہ یہاں کوئی آتا ہی نہیں تھا اور یہ علاقہ دنیا سے دور تھا، یہاں سڑکیں اتنی مشکل تھیں کہ یہاں کہ علاقے بھی ایک دوسرے سے رابطے میں نہیں تھے۔انہوں نے کہا کہ اسے دیکھنے کے بعد دنیا کے دیگر خوبصورت علاقوں میں گیا تو اس چیز کا فخر ہوتا تھا کہ پاکستان میں ایسا علاقہ ہے جس کا مقابلہ دنیا میں کوئی نہیں کرسکتا تھا۔انہوں نے کہا کہ بیرون ملک سے جب اپنے دوستوں کو پاکستان کا یہ حصہ دکھایا تو انہوں نے بھی کہا کہ اس سے خوبصورت دنیا میں کوئی علاقہ نہیں تبھی میں نے اس علاقے کی مدد کا فیصلہ کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ میں نے ایک تصاویر پر مشتمل کتاب ”انڈس جرنی”لکھی اور جب وہ انگلینڈ میں شائع ہوئی تو سب دنگ رہ گئے کہ یہ بھی پاکستان ہے،بیرون ملک کے لوگوں کو چھوڑیں ہمارے اپنے لوگوں کو نہیں پتہ کہ پاکستان کتنا خوبصورت ہے، ان سب کی پراپرٹیز باہر ہیں یہ چھٹیاں منانے بھی وہیں جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جب سے ہماری حکومت آئی تو ہم نے اس خطے کو اوپر لانے کا فیصلہ کیا تھا،یہاں فوڈ پراسیسنگ کی بہت گنجائش ہے تاہم اصل میں یہاں سیاحت کے فروغ کے بہت زیادہ مواقع ہیں۔انہوں نے کہا کہ ‘سوئٹزرلینڈ ہمارے گلگت بلتستان سے آدھا ہے اور وہ صرف سیاحت سے 60 سے 80 ارب ڈالر کماتا ہے، ہم بھی اس خطے کو ترقی دیں تو ملک اور قوم دونوں کا فائدہ ہوگا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہمارے سابق حکمرانوں کے بچے اور جائیدادیں باہر ہیں، ملک سے پیسہ باہر لے جانے والے سب سے بڑے غدار ہیں۔انہوں نے کہا کہ مجھ سے بڑے غلط فیصلے بھی ہوجاتے ہیں، ماضی میں مجھ سے ٹکٹ دینے میں کئی غلطیاں ہوئیں، ٹکٹ دینے میں غلط فیصلے پراکثرسوچتارہتاہوں، کہ کسے وزارت دینی چاہیے تھی اور کسے ٹکٹس دینے چاہئیںتھے ، کچھ لوگ اپنی ذات کوفائدہ پہنچانے کیلئے اقتدار میں آتے ہیں۔ اقتدار میں آکر یہ لوگ پیسا ملک سے باہربھیجتے ہیں، پیسا چوری کرکے بیرون ملک لے جانے والے دہرا نقصان پہنچاتے ہیں ۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے اپنے خطاب میں کہا کہ گلگت بلتستان کی ترقی کیلئے 370 ارب روپے خرچ کیے جائیں گے، وزیراعظم کا وژن پسماندہ علاقوں کو ترقی دینا ہے، ان کی گلگت بلتستان کی ترقی پر خصوصی توجہ ہے، گلگت بلتستان سے خوبصورت علاقہ دنیا میں کہیں نہیں، علاقے میں سیاحت کے فروغ کیلئے کام جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ سکردو اور چلاس میں ہسپتالوں کو بہتر کر رہے ہیں، گلگت بلتستان کے عوام کو بااختیار بنانا ہے۔ کراچی، بلوچستان، اندرون سندھ کے بعد یہاں ترقیاتی پیکج کا اعلان کیا گیا، وزیراعلی گلگت بلتستان علاقے کی ترقی کیلئے سنجیدہ ہیں۔