او آئی سی وزرائے خارجہ اجلاس میں فلسطین کے حق میں اور اسرائیلی مظالم کیخلاف قرارداد منظور

اسرائیل کو خبردار کرتے ہیں کہ وہ حالات کو مزید بگاڑنے سے باز رہے

جدہ ،اسلام آباد (ویب ڈیسک)

اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) وزرائے خارجہ اجلاس میں فلسطین کے حق میں اور اسرائیلی مظالم کیخلاف قرارداد منظور کرلی گئی ہے، سعودی عرب کی درخواست پر فلسطین کی صورتحال پر او آئی سی وزرائے خارجہ کا ہنگامی ورچیول اجلاس طلب کیا گیا تھا جس میں اسرائیلی حملوں اور فلسطین کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں فلسطین کے حق میں اوراسرائیلی مظالم کے خلاف قرارداد منظور کی گئی جس میں کہا گیا ہے کہ القدس الشریف اور مسجد اقصی کی حیثیت مسلم امہ کیلئے ریڈ لائن کی سی ہے۔قرارداد میں  اسلامی ممالک نے کہا ہے کہ اسرائیل کے ظالمانہ اور وحشیانہ اقدام کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہیں قابض اسرائیل فلسطینیوں کیخلاف وحشیانہ حملے بند کرے۔ اسرائیل کو خبردار کرتے ہیں کہ وہ حالات کو مزید بگاڑنے سے باز رہے۔ مطالبہ کرتے ہیں کہ اسرائیل تمام تر خلاف ورزیاں فوری بند کرے ، اسرائیل فلسطینی مقدس مقامات کی بے حرمتی فوری بند کرے۔ قرارداد میں مزید کہا گیا ہے کہ اسرائیل فلسطینی مقدس مقامات کی تاریخی اور قانونی حیثیت کی خلاف ورزی نہ کرے ۔ القدس کی ہاشمی خاندان کے ذریعے نگرانی کی حمایت کرتے ہیں۔ اسرائیل کے توسیعی منصوبے کو مسترد کرتے ہیں۔ اسرائیل کی نو آبادیاتی پالیسی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہیں۔ حالات کی خرابی کا ذمہ دار مکمل طورپر اسرائیل کو ٹھہراتے ہیں۔قرارداد میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ سلامتی کونسل فوری طورپر اسرائیلی حملے بند کرائے ۔ عالمی برادری سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اپنی ذمہ داریاں پوری کرے۔