بھارتی جارحیت کا خطرہ؛ پاک فوج کو ہائی الرٹ کر دیا گیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک)

بھارت کسانوں کے احتجاج، کشمیر میں مظالم اور عالمی میڈیا سے توجہ ہٹانے کیلئے فالس فلیگ آپریشن کی کوششوں میں مصروف ہے، 2016 میں بھی بھارت نے ناکام سرجیکل سٹرائیکس کا دعویٰ کیا تھا۔ 26 فروری 2019 کو بھی بھارت نے ناکام آپریشن کی کوشش کی۔

بھارت ایک مربتہ پھر خطے کے امن کو تباہ کرنے کیلئے سر گرم، لداخ اور دو کلم میں ہزیمت کے بعد ہندوستان پر اندورنی اور بیرونی دباؤ ہے۔ بھارت نے کارگل سے حاصل سبق کو بھلا دیا۔ کارگل میں بھارت نے حقائق چھپائے اور زیب داستان کئی کہانیاں گھڑیں۔ بھارتی ملٹری نے حقائق کو اپنے زاویے سے دکھانا شروع کر رکھا ہے۔ ڈوکلم کرائس 2017 سے لیکر اب تک مودی حکومت حقائق تسلیم کرنے سے انکاری ہے۔

دوسری جانب بھارتی میڈیا بھی بالاآخر مودی سرکار کے خلاف بول اٹھا ہے، بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ ہندوستانیوں سے حقائق مت چھپاؤ،  بھارت نے کارگل سے حاصل سبق کو بھلا دیا اور  کارگل میں حقائق چھپائے تھے، جب کہ زیب داستان کئی کہانیاں گھڑیں۔

واضح رہے کہ بھارتی ملٹری نے حقائق کو اپنے زاؤیے سے دکھانا شروع کر رکھا ہے،  2017سے لے کر اب تک مودی کی حکومت بے یقینی اور حقائق کو تسلیم کرنے سے انکاری ہے. من گھڑت خبریں پسندیدہ چینلز کے ذریعے لیک کی جاتی ہیں۔ بھارت نے اس مقصد کیلئے انفارمیشن وار فیئر قائم کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت کسی بھی وقت اپنے اندرونی مسائل سے توجہ ہٹانے کیلئے پلوامہ ڈرامہ کی طرز پر لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری پر کسی ایکشن کی تیاری میں مصروف ہے، جس کے بعد مسلح افواج کو ہائی الرٹ کر دیا گیا ہے۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.