ترقیاتی فنڈز کیس’جسٹس قاضی فائز کا فیصلے کی کاپی نہ ملنے پر رجسٹرار کو خط 

ترقیاتی فنڈز کیس’جسٹس قاضی فائز کا فیصلے کی کاپی نہ ملنے پر رجسٹرار کو خط

 فیصلے سے اتفاق یا اختلاف کا موقع کیوں فراہم نہیں کیا گیا؟جسٹس قاضی فائز

 حیران ہوں جسٹس اعجاز الاحسن کو فیصلے کی کاپی موصول ہوئی مجھے ابھی تک کیوں نہیں ملی

اسلام آباد(ویب  نیوز) سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسی نے وزیر اعظم کی جانب سے ارکان اسمبلی کو ترقیاتی فنڈز جاری کرنے سے متعلق کیس کے فیصلے کی کاپی طلب کرلی۔جسٹس قاضی فائز عیسی کی جانب سے سپریم کورٹ کے رجسٹرار کو خط لکھا گیا ہے جس میں معزز جج نے کہا ہے کہ حیران ہوں مجھے ابھی تک آرڈر کی فائل موصول کیوں نہیں ہوئی، کیس کے تحریری فیصلے کی کاپی مجھے نہیں دی گئی،برائے کرم مقدمے کی فائل فراہم کی جائے تاکہ فیصلہ پڑھ سکوں۔جسٹس قاضی فائز نے خط میں کہا کہ عدالتی روایت کے مطابق بینچ کاحصہ بننے والے ججزکو فیصلے کی کاپی دی جاتی ہے، جسٹس اعجاز الاحسن کو فیصلے کی کاپی موصول ہوئی مگرمجھے نہیں۔جسٹس قاضی فائز نے سوال کیا کہ مجھے کاپی فراہم کرنے سے پہلے میڈیا کو کیسے دے دی گئی؟ فیصلہ میڈیا کو جاری کرنے کا آرڈر کس نے دیا؟مجھ سے پہلے میڈیا کے ذریعے کیس کے فیصلے سے پوری دنیا کو پتا چل چکا تھا،مجھے کیوں اس فیصلے سے اتفاق یا اختلاف کا موقع فراہم نہیں کیا گیا؟

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.