بھارت ، سرکاری ہسپتال کی پارکنگ میں کورونا سے متاثرہ خاتون دم توڑ گئی

 کار پارکنگ میں خاتون 3 گھنٹے تک اذیت میں مبتلا رہی لیکن ہسپتال انتظامیہ نے اسے دیکھنے سے معذرت کر لی

نئی دہلی (ویب ڈیسک)

بھارت کے ایک سرکاری ہسپتال کی پارکنگ میں کورونا وائرس سے متاثرہ 35 سالہ خاتون دم توڑ گئی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت میں کورونا کی خطرناک صورتحال کے باعث متاثرہ مریض ہسپتالوں کے باہر دم توڑنے لگے۔بھارت میں کورونا کے بڑھتے کیسز کے باعث روزانہ ہی نئے ناقابل بیان سانحات کے ان گننت واقعات سامنے آ رہے۔بھارت میں نوئیڈا کے ایک سرکاری ہسپتال کی پارکنگ میں کورونا سے متاثرہ 35 سالہ خاتون دم توڑ گئی۔ خاتون کے اہلخانہ ہسپتال انتظامیہ کی منتیں کرتے رہے تاہم ہسپتال میں جگہ نہ ہونے کے باعث خاتون کو ہسپتال میں داخل نہیں کیا جا سکتا اور وہ کار پارکنگ میں تڑپ تڑپ کر اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھی۔نوئیڈا کے جم ہسپتال کی کار پارکنگ میں خاتون 3 گھنٹے تک اذیت میں مبتلا رہی لیکن ہسپتال انتظامیہ نے اسے دیکھنے سے معذرت کر لی۔ خاتون بطور انجینئر نوئیڈا میں کام کرتی تھیں اور وہاں اکیلی رہتی تھی اور اس کے دو بچے اپنے والد کے ہمراہ مدھیہ پردیش میں رہائش پذیر ہیں۔ایک عینی شاہد نے بتایا کہ خاتون کئی گھنٹے ہسپتال کے باہر موجود رہی لیکن انتظامیہ نے بے بسی کا اظہار کر دیا اور بالآخر خاتون کو مردہ قرار دے دیا۔