imran khan

عیدالفطر کے موقع پر ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے، عمران خان

ترقیاتی کاموں سے معاشی سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا، روزگار کے مواقع پیدا ہونگے،وزیراعظم کا وفاقی کابینہ کے اجلاس سے خطاب

وفاقی کابینہ نے قیدیوں کی سزا میں 90روز کمی کی منظوری دے دی، قیدیوں کی سزا میں کمی کا اطلاق سنگین جرائم میں ملوث قیدیوں پر نہیں ہو گا

ہیوی انڈسٹری ٹیکسلا میں پروڈکشن کنٹرول ممبر کی تعیناتی، این ای ڈی انجینئرنگ یونیورسٹی کے 100 سال مکمل ہونے پر اعزازی سکہ جاری کرنے کی بھی منظوری

سول انتظامیہ کی مدد کیلئے پاک فوج ، ریلوے کنسٹرکشن پاکستان لمیٹڈ کے سی ای او کی تعیناتی اور ریلوے اور ٹیکس بیریر میں نجی شعبہ کی شمولیت کی منظوری بھی دے دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک)

وزیراعظم عمران خان نے عیدالفطر کے موقع پر ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کرانے کی منظوری دے دی۔وزیراعظم کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں قیدیوں کی سزا میں 90 روز کمی کی منظوری دے دی گئی۔جس میں 8 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا۔عید الفطر پر قیدیوں کی سزا میں کمی اور سول انتظامیہ کی مدد کے لیے پاک فوج کی تعیناتی سمیت آٹھ نکاتی ایجنڈ ازیر غور رہا۔ اجلاس میں ملک میں کورونا وائرس کی صورتحال اور ویکسی نیشن سے متعلق بریفنگ دی گئی جبکہ آئندہ مالی سال کے بجٹ سے متعلق تجاویز پر بھی گفتگو ہوئی۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ عیدالفطر کے موقع پر ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے۔کابینہ نے ہیوی انڈسٹری ٹیکسلا میں پروڈکشن کنٹرول ممبر کی تعیناتی، این ای ڈی انجینئرنگ یونیورسٹی کے 100 سال مکمل ہونے پر اعزازی سکہ جاری کرنے، سول انتظامیہ کی مدد کے لیے پاک فوج کی تعیناتی، ریلوے کنسٹرکشن پاکستان لمیٹڈ کے سی ای او کی تعیناتی اور ریلوے اور ٹیکس بیریر میں نجی شعبہ کی شمولیت کی منظوری بھی دے دی۔اجلاس کو مہنگائی کو روکنے کیلئے بنائی گئی حکمت عملی سے بھی آگاہ کیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ آئندہ بجٹ میں عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیا جائے گا، عوامی ضروریات کے ترقیاتی منصوبوں کو ترجیح دی جائے گی، ترقیاتی کاموں سے معاشی سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا، روزگار کے مواقع پیدا ہونگے۔وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کے مطابق قیدیوں کی سزا میں کمی کا اطلاق سنگین جرائم میں ملوث قیدیوں پر نہیں ہو گا اور آئندہ بجٹ میں عوام میں خوشخبریاں ملیں گی جبکہ بجٹ میں عوام کو ریلیف دیا جائے گا۔