مشترکہ اجلاس، اراکین کے مہمانوں، سکیورٹی گارڈز کو پارلیمنٹ ہائوس داخلے کی اجازت نہیں ہو گی

اسلام آباد  (ویب ڈیسک)

کورونا وبا کے پیش نظر اراکین  پارلیمنٹ کے مہمانوں اور سیکیورٹی گارڈز کومشترکہ اجلاس کے موقع پر پارلیمنٹ ہاوس کے احاطے میں داخلے کی اجازت نہیں ہو گی اجلاس  پیر 4بجے سہ پہر  ہو گا۔ مشترکہ اجلاس سے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی خطاب کریں گے۔ قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کی جانب سے اجلاس میں شرکت کے لیے خصوصی دعوت نامے جاری کیے گئے ہیں۔ مشترکہ اجلاس میں چاروں صوبائی گورنرز، وزرا اعلی، صدر اور وزیراعظم آزاد کشمیر، وزیر اعلی اور گورنر گلگت بلتستان کو شرکت کے لیے دعوت نامے جاری کیے گئے ہیں۔ مشترکہ اجلاس میں چاروں صوبائی اسمبلیوں کے سپیکرز سمیت سپیکرز قانون ساز اسمبلی آزاد کشمیر و گلگت بلتستان اور وزیر اعظم کے معاونین خصوصی کو بھی  مشترکہ اجلاس میں شرکت کے لیے خصوصی دعوت نامے جاری کیے گئے ۔  چیف جسٹس آف پاکستان، آڈیٹر جنرل آف پاکستان، چیف الیکشن کمشنر سمیت آئینی اداروں کے سربراہان اور وفاقی سیکرٹریز کو بھی مشترکہ اجلاس میں شرکت کی دعوت دی گئی ۔ اجلاس میں شرکت کے لیے مسلح افواج کے سربراہان  پاکستان میں تعینا ت غیر ملکی سفیروں اور میڈیا کے نمائندوں کو بھی خصوصی دعوت نامے جاری  کئے گئے ہیں ۔ مشترکہ اجلاس میں مدعو کیے گئے معزز مہمانوں کے بیٹھنے کے انتظامات کورونا ایس او پیز  کے تحت کیے جائیں گے۔ کورونا وبا کے پیش نظر اراکین  پارلیمنٹ کے مہمانوں اور سکیورٹی گارڈز کو پارلیمنٹ ہائوس کے احاطے میں داخلے کی اجازت نہیں ہو گی، اس سلسلے میں قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کی جانب سے خصوصی مراسلہ جاری کیا گیا ہے۔ اراکین پارلیمنٹ کی سہولت کے لیے پارلیمنٹ لاجز سے پارلیمنٹ ہاؤس تک خصوصی شٹل سروس چلائی جائے گی۔