شریف اور زرداری فیملی نے پیسہ پاکستان سے باہر منتقل کیا، فواد چوہدری

شریف اور زرداری فیملی نے پیسہ پاکستان سے باہر منتقل کیا، فواد چوہدری

جس معاملے کو اٹھاتے ہیں اس کے نیچے کرپشن کے پہاڑ کھڑے ہوتے ہیں

بجٹ کا سب سے بڑا خرچہ قرضوں کی واپسی ہے ،جو لوگ مگرمچھ کے آنسو بہا رہے ملک کے حالات انہی کی وجہ سے ہیں،وزیر اطلاعات کی پریس کانفرنس

(ن)لیگ دور میں چار رویہ سڑک 37کروڑ روپے میں بنی ، موجودہ حکومت میں 17 کروڑ روپے میں بن رہی ہے،مراد سعید

اسلام آباد( ویب  نیوز)وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ شریف اور زرداری فیملی نے پیسہ پاکستان سے باہر منتقل کیا، جس معاملے کو اٹھاتے ہیں اس کے نیچے کرپشن کے پہاڑ کھڑے ہوتے ہیں،بجٹ کا سب سے بڑا خرچہ قرضوں کی واپسی ہے ،جو لوگ مگرمچھ کے آنسو بہا رہے ملک کے حالات انہی کی وجہ سے ہیں۔اسلام آباد میں وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید کے ہمراہ پریس کانفرنس کے دوران فواد چوہدری نے کہاکہ اس سے انکار نہیں کہ موٹرویز اور سڑکوں سے ہی ترقی ہوتی ہے، عمران خان موٹر وے کے نہیں بلکہ اس میں ہونے والی کرپشن کے خلاف تھے، شریف فیملی نے سڑکوں کو بڑا کاروبار بنایا، لاہور اسلام آباد موٹر وے 60ارب روپے کی لاگت سے بنائی گئی، یہ رقم باہر سے قرضوں کی شکل میں آرہی تھی، موٹروے کی صرف سود کی رقم 2 ارب ڈالر دی گئی، جب موٹروے بن رہی تھی

نواز شریف فیملی اس وقت لندن میں ایون فیلڈ اپارٹمنٹس خرید رہی تھی۔یہ پیسہ کہاں سے آرہا تھا ؟،سڑکوں کے نام پر بہت بڑی کرپشن کی جارہی تھی جبکہ دو ارب ڈالر ڈیوو کمپنی کو سود کی مد میں ادائیگی کی گئی تھی۔فواد چوہدری نے کہا کہ پاکستان کے نام پر لیا گیا قرضہ باہر لے جایا جاتا رہا، شریف اور زرداری فیملی نے پیسہ پاکستان سے لیا اور اسے باہر منتقل کیا، انہوں نے لندن اور فرانس میں اربوں روپے ابھی بھی چھپائے ہوئے ہیں، 10 سال میں شریف اور زرداری خاندان نے ملک کا قرضہ دگنا کردیا، ہم نے تین سال میں دس ارب ڈالر قرض واپس کیا ہے، ابھی بھی پاکستان پر قرضوں کے پہاڑ موجود ہیں۔ فواد چوہدری نے کہا کہ عمران خان کہتے ہیں کہ ہم مافیا سے مقابلہ کررہے ہیں، عوام کی کرپشن سے قومیں تباہ نہیں ہوتی، کابینہ ارکان کرپشن میں پڑ جائیں تو قومیں تباہ ہوتی ہیں ، جس معاملے کو اٹھاتے ہیں، اس کے نیچے کرپشن کے پہاڑ کھڑے ہوتے ہیں، شہباز شریف نے کہا ہے ملک میں ہوشربا مہنگائی ہوگئی ہے،شہباز شریف کے 25 ملین ڈالر چپڑاسیوں کے اکانٹس سے آئے،وزیر اطلاعات کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے تین سالوں میں دس ارب ڈالر کے قرضے واپس کئے ہیں ۔اس موقع پر مراد سعید نے کہا کہ پچھلے 10 سال پاکستان کی تاریخ کا تاریک ترین عشرہ تھا، نواز شریف نے اپنے دور میں مواصلات کی وزارت اپنے پاس رکھی تھی، اس وزارت میں یہ نعرہ لگایا جاتا تھا کہ کھاتا ہے تو لگاتا ہے ، وزیراعظم عمران خان نے ہر جگہ قوم کا پیسہ بچایا ہے، جو کنٹریکٹس دئیے گئے وہ ہماری ویب سائٹ پر موجود ہیں جبکہ وزیراعظم عمران خان قرضے لیکر موٹروے بنانے کے مخالف تھے اور ہیں، مراد سعید نے ہم ایک موٹروے بھی قرضے لے کر نہیں بنا رہے، اسلام آباد لاہور موٹروے ایک سو سات کلومیٹر زیادہ طویل بنایا گیا، ہمارے اور انکے سڑکیں بنانے میں کیا فرق ہے ، (ن)لیگ دور میں چار رویہ سڑک 37کروڑ روپے میں بنی جب کہ موجودہ حکومت کے دور میں چار رویہ سڑک 17 کروڑ روپے میں بن رہی ہے، ہمارا ان سے مقابلہ کیا جائے تو اب تک 3 ہزار ارب کی بچت کی جاچکی ہے۔