زمین واگزار کرانے کیلئے قانون کا سختی سے نفاذ یقینی بنایا جائے، عمران خان

زمین واگزار کرانے کیلئے قانون کا سختی سے نفاذ یقینی بنایا جائے، عمران خان

حکومت ماحولیاتی تحفظ کیلئے جنگلات کی زمینوں کی حفاظت کو یقینی بنا رہی ہے

فوڈ سکیورٹی اور موسمیاتی تبدیلی اس وقت بشمول پاکستان دنیا بھر کا سب سے اہم مسئلہ ہے

وزیراعظم کا قومی رابطہ کمیٹی برائے ہائوسنگ و تعمیرات کے اجلاس میں اظہار خیال

اسلام آباد(  ویب نیوز)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ قبضہ شدہ زمین کو واگزار کرانے کیلئے قانون کا سختی سے نفاذ یقینی بنایا جائے، حکومت ماحولیاتی تحفظ کیلئے جنگلات کی زمینوں کی حفاظت کو یقینی بنا رہی ہے، فوڈ سکیورٹی اور موسمیاتی تبدیلی اس وقت بشمول پاکستان دنیا بھر کا سب سے اہم مسئلہ ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی برائے ہائوسنگ و تعمیرات کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وزیرِ مملکت برائے اطلاعات و نشریات فرخ حبیب ، معاونِ خصوصی ڈاکٹر شہباز گِل اور متعلقہ اعلی افسران نے شرکت کی۔وزیراعظم کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ نیا پاکستان ہائوسنگ کے تحت فراش ٹائون اور دیگر انفراسٹرکچر کے منصوبے بھی جلد مکمل کر لئے جائیں گے۔ اسلام آباد میں جنگلات کی زمین کے ریکارڈ کی ڈیجیٹلائزیشن بھی تقریبا مکمل کی جا چکی ہے۔ اجلاس کو سرویئر جنرل کی طرف سے کیڈسٹرل میپنگ پر بھی تفصیلی بریفنگ دی گئی۔بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ اسلام آباد اور لاہور سمیت پورے ملک میں ڈیجیٹل میپنگ اور سرکاری زمینوں کی نشاندہی پر کام تیزی سے جاری ہے۔ اجلاس کو سپیشل/سائٹ ڈویلپمنٹ زونز پر بھی بریفنگ دی گئی۔ ڈویلپمنٹ زونز پیری اربن سیٹلمنٹس کو بنیادی سہولیات کی فراہمی یقینی بنائیں گے۔بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ منصوبے سے زمین کا بہتر استعمال اور غیر قانونی سوسائٹیوں کی روک تھام میں مدد بھی ملے گی۔اس موقع پروزیراعظم عمران خان نے کہا کہ حکومت ماحولیاتی تحفظ کیلئے جنگلات کی زمینوں کی حفاظت کو یقینی بنا رہی ہے، فوڈ سکیورٹی اور موسمیاتی تبدیلی اس وقت بشمول پاکستان دنیا بھر کا سب سے اہم مسئلہ ہے۔ان کا کہنا تھا کہ حکومت قبضہ شدہ زمین کو واگزار کرانے کیلئے اقدامات کر رہی ہے، قبضہ شدہ زمین کو واگزار کرانے کیلئے قانون کا سختی سے نفاذ یقینی بنایا جائے۔ کیڈسٹرل میپمنگ سے ڈیڈ کیپٹل کی نشاندہی اور اس کا بہتر استعمال ممکن ہو سکے گا۔