منی لانڈرنگ ریفرنس ،شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز پر فرد جرم عائد

منی لانڈرنگ ریفرنس ،شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز پر فرد جرم عائد

صحت جرم سے انکار ، عدالت نے استغاثہ کو گواہ پیش کرنے کی ہدایت کردی

 شہباز شریف کے خلاف تینوں مقدمات میں حاضری معافی کی درخواست منظور

لاہور(ویب  نیوز)لاہور کی احتساب عدالت نے منی لانڈرنگ ریفرنس میں مسلم لیگ (ن) صدر شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز پر فرد جرم عائد کر دی، شہباز شریف کی تینوں مقدمات میں حاضری معافی کی درخواست منظور کر لی گئی۔جمعہ کو لاہور کی دو احتساب عدالتوں میں تین مقدمات کی سماعت ہوئی،  پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز رمضان شوگر مل اور منی لانڈرنگ کے ریفرنسز میں پیش ہوئے جبکہ شہباز شریف کے خلاف تینوں مقدمات منی لانڈرنگ ، آشیانہ اور رمضان شوگرمل ریفرنس میں حاضری معافی کی درخواست پیش کی گئی جسے عدالت نے منظور کر لیا،نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ 3ریفرنسز میں ایک ہی تاریخ سے گواہوں کے بیان ریکارڈ نہیں ہوسکتے، جس پر عدالت نے کہا کہ جب گواہوں کے بیانات ریکارڈ ہونا شروع ہوں گے تو دیکھ لیں گے۔۔ عدالتوں نے تینوں مقدمات میں استغاثہ کے گواہوں کو طلب کرتے ہوئے سماعت 18 اکتوبر تک ملتوی کر دی۔منی لانڈرنگ ریفرنس میں عدالت نے شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز پر پلیڈر کے ذریعے فرد جرم عائد کی۔صحت جرم سے انکار پر عدالت نے استغاثہ کو گواہ پیش کرنے کی ہدایت کر دی۔