کراچی:پی ایم اے کامئی میں کرونا وائرس کی وبا تیزی سے پھیلنے کا خدشہ

کراچی(صباح نیوز)
پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے مئی میں کرونا وائرس کی وبا تیزی سے پھیلنے کا خدشہ ظاہر کر دیا ہے، پی ایم اے کا کہنا ہے کہ مئی کے دوسرے، تیسرے ہفتے میں کرونا کیسز اندازے سے زیادہ ہوں گے، اسپتالوں، ڈاکٹرز، پیرا میڈیکل اسٹاف پر بوجھ حد سے زیادہ ہوگا، عوام اور انتظامیہ کو سخت حفاظتی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔پی ایم اے کے جنرل سیکریٹری ڈاکٹر قیصر سجاد نے نجی نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مئی کے پہلے سے تیسرے ہفتے تک کیسز میں بے تحاشا اضافے کا خدشہ ہے، کیسز بڑھنے کی وجہ بظاہر یہی ہے کہ سرکار کا لاک ڈاؤن مؤثر نہیں، رمضان میں بھی ہم سماجی رابطے کم کرنے پر کنٹرول نہیں کر پائیں گے، ہمارے پاس بیڈز اور وینٹی لیٹرز کی تعداد بہت کم ہے، لوگوں سے گزارش ہے کہیں نہ جائیں گھر پر بیٹھیں۔انھوں نے کہا کہ ڈاکٹرز کی مکمل حفاظتی سامان کی دستیابی اب تک ممکن نہیں ہو پا رہی، کرونا سے نمٹنے کے لیے تربیت یافتہ عملے کی بھی کمی کا سامنا ہے، امریکا تک کو چین سے وینٹی لیٹرز منگوانا پڑے، پاکستان میں تو کرونا سے نمٹنے کے لیے صورت حال بہت خراب ہے، ملک کا ہر شخص یہ بات سمجھ لے کہ کرونا وائرس حقیقت ہے۔ڈاکٹر قیصر کا کہنا تھا کہ 5 سے 6 دنوں میں کرونا کیسز اور اموات کی تعداد دگنی ہوگئی ہے، کرونا کے پیک کے خدشے کو عوام مل کر ہی ختم کر سکتے ہیں، بیان نہیں کر سکتے کرونا سے کس حد تک خطرناک صورت حال ہو سکتی ہے، علما سے بھی گزارش ہے رمضان میں عبادات سے متعلق فیصلے پر نظر ثانی کریں۔

Editor

Next Post

پاکستان میں کورونا متاثرین کی تعداد 10 ہزار سے تجاوز، اموات 212 ہوگئیں

بدھ اپریل 22 , 2020
اسلام آباد(صباح نیوز) پاکستان میں کورونا وائرس کا پھیلاو دن بدن تیز ہوتا جارہا ہے اور بدھ کو بھی مزید کیسز سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد 10 ہزار 69 ہوگئی جبکہ 212 افراد وائرس کے باعث انتقال کرچکے ہیں۔ملک میں 26 فروری کو پہلا کیس سامنے آیا اور […]