پی آئی اے کے بعد ریلوے نے دس فیصد کرائیوں میں کمی کااعلان کردیا 

پی آئی اے کی طرف سے کرائیوں میں کمی کے بعد ریلوے نے دس فیصد کرائیوں میں کمی کااعلان کردیا

کرائیوں میں کمی کے باوجود رٹرین کاکرایہ فضائی سفرسے زیادہ ،عوام نے فضائی سفر کارخ کرلیا

21ستمبر سے اے سی بزنس کلاس کے کرایوں میں 10 اوراے سی سٹینڈرڈ کے کرایوں میں 5 فیصد کمی کا فیصلہ کیاہے شیخ رشیداحمد

ریلوے گندم اور چینی کی ترسیل کی بھرپور تیاری رکھتاہے، پوائنٹ ٹو پوائنٹ ترسیل کے اصول کے تحت صارفین کو گھر تک ڈیلیوری کی سہولت دی جائے گی

اسلام آباد/لاہور(ویب ڈیسک )پی آئی اے کی طرف سے کرائیوں میں کمی کے بعد ریلوے نے دس فیصد کرائیوں میں کمی کااعلان کردیا،کرائیوں میں کمی کے باوجود ریل کاکرایہ پی آئی اے سے زیادہ ہے۔عوام نے فضائی سفر کارخ کرلیا ۔وفاقی وزیرریلوے شیخ رشید احمد نے کہاہے کہ پاکستان ریلوے نے 21ستمبر سے تمام ٹرینوں کے اے سی بزنس کلاس کے کرایوں میں 10فیصد اوراے سی سٹینڈرڈ کے کرایوں میں 5 فیصد کمی کا فیصلہ کیاہے۔ پیر سے تمام ٹرینوں کے ساتھ ڈائنگ کاریں لگا رہے ہیں جوکہ کرونا خدشات کے باعث معطل کی گئیں تھیں۔ ان فیصلوں کا اعلان وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے ریلوے ہیڈکوارٹرز آفس لاہورمیں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان ریلوے مزید متحرک ، فعال اور آمدنی میں اضافہ کرنے کے لیے اپنی کارگو سروس کو بہتر کرنے جارہا ہے جس کے تحت سامان اب صرف ریلوے اسٹیشن پر ہی بک نہیں ہوگا بلکہ اس کی پوائنٹ ٹو پوائنٹ ترسیل کے اصول کے تحت صارفین کو گھر تک ڈیلیوری کی سہولت دی جائے گی اس کے ساتھ ساتھ پاکستان ریلوے گندم اور چینی کی ترسیل کی بھرپور تیاری رکھتاہے۔ریلو ے میں یہ کام 72 سالوں میں پہلی بار ہونے جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کو ریلوے کا منی ہیڈکوارٹرز بنایا جارہا ہے ریلوے ہیڈکوارٹرز آفس لاہو رمیں تعینات افسروں کو کراچی تعینات کیا جائے گا تاکہ وہ آپریشنل سسٹم کا حصہ بن سکیں۔ ایک سوال کے جواب میں وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشیدا حمد نے کہا کہ ریلوے میں ایم ایل ون کا شدت سے انتظار ہے 20 ستمبر تک ایم ایل ون کا ٹینڈر ہوجائے گا ایک سے دوروز تک ایم ایل ون کی پبلسٹی بھی شروع ہوجائے گی کیونکہ ایم ایل ون وزیر اعظم عمران خان کی حکومت کا گیم چینچرثابت ہوگا۔ اس سے حادثوں سے جان چھوٹ جائے گی، روڈ سے رش کم ہوگا اور ساری ٹریفک ٹریک پر منتقل ہوجائے گی یہ کام ریلوے میں 72 سال بعد ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بارشوں کی وجہ سے ٹرینیں لیٹ ہورہی ہیں کیونکہ کراچی، کوٹری، حیدرآباد ریلوے اسٹیشن پانی میں ڈوب گئے ہیں ۔ پنشنرز اور گریجویٹی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلویز نے کہا کہ ٹھیکداروں کو پیسے دینے کی بجائے اب ہم پنشن اور گریجویٹی کے واجبات ادا کریں گے۔اس خبررساں ادارے کے مطابق  فضائی سفرکے کرائیوں میں نمایاں کمی کے بعد ریلوے میں مسافروں کے رش میں کمی واقع ہوئی ہے جبکہ فضائی سفر سستا ہونے کی وجہ سے عوام جو پہلے ٹرین میں سفر کرتے تھے وہ اب فضائی سفر کوترجیح دے رہے ہیں ریلوے کی طر ف سے دس فیصد کرائیوں میں کمی کااعلان کردیاگیاہے مگر ریل کرائیوں میں کمی کے باوجود ریل کاکرایہ پی آئی اے سے زیادہ ہے۔

#/S

Editor

Next Post

رواں ماہ کا دوسرا ہفتہ .... پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رجحان

ہفتہ ستمبر 12 , 2020
کراچی :رواں ماہ کے دوسرے ہفتے کے دوران بھی پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رجحان کے ایس ای100انڈیکس 500پوائنٹس بڑھ کر 42500پوائنٹس کی سطح پر جا پہنچا ،سرمائے میں 119ارب روپے سے زائد کا اضافہ ریکارڈ کراچی(ویب ڈیسک )رواں ماہ ستمبرکے دوسرے ہفتے کے دوران بھی پاکستان اسٹاک مارکیٹ […]