پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مسلسل تیسرے روز تیزی کا رجحان 

کراچی : اسٹاک ایکس چینج میں مسلسل تیسرے روز بھی کاروبار حصص میں تیزی کا رجحان برقرار

کے ایس ای 100انڈیکس مزید 170.75پوائنٹس کے اضافے سے46458.13پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا

کراچی(ویب  نیوز) پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مسلسل تیسرے روز بدھ کو بھی کاروبار حصص میں تیزی کا رجحان  جاری رہا،کاروبار میں رہنے والی تیزی کے نتیجے میںکے ایس ای 100انڈیکس مزید 170.75پوائنٹس کے اضافے سے46458.13پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا جب کہ 53.20فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت 20ارب69کروڑ  روپے سے زائد بڑھ گئی اور حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بھی منگل کی نسبت 1.27فیصدزائد رہا۔پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں گزشتہ روزٹریڈنگ کے آغاز سے ہی سرمایہ کاروں کی جانب سے نئی سرمایہ کاری میں زبردست جوش وخروش دیکھنے میں آیا جس کے باعث تیزی رہی اورکے ایس ای 100انڈیکس46698پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا بعد ازاں46500اور45600 کی نفسیاتی حد یں برقرار نہ رہ سکی لیکن تیزی کا رجحان غالب رہااورکاروبار کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس170.75پوائنٹس کے اضافے سے46458.13پوائنٹس پر بند ہوا۔،اسی طرح کے ایس ای30انڈیکس111.27پوائنٹس کے اضافے سے19370.27پوائنٹس، کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 47.42پوائنٹس کے اضافے سے32072.89پوائنٹس اور کے ایم آئی30انڈیکس400.25پوائنٹس بڑھ کر74008.61پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیا ۔بدھ کو 421کمپنیوں کا کاروربار ہوا جس میں سے224کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ187میں کمی اور 10کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا ۔بدھ کے روز مارکیٹ میں61کروڑ9لاکھ40ہزار266شیئرز کا کاروبار ہوا جبکہ گزشتہ روز منگل کو60کروڑ32لاکھ40ہزار345حصص کے سودے ہوئے تھے۔کاروبار میںتیزی کے باعث مارکیٹ  کا مجموعی سرمایہ 20ارب69کروڑ70لاکھ430 روپے بڑھ کر83کھرب84ارب93کروڑ18ہزار795روپے ہوگیا ۔کاروباری سرگرمیوں کے اعتبار سے نمایاں کمپنیوں میں اذگارڈ نائن،پاک انٹرنیشنل بلک،ٹی آر جی پاکستان،حیسکول پیٹرول،فوجی سیمنٹ،بائیکو پیٹرولیم،پاکستان ریفائنری،سلک بینک،یونٹی فوڈز اورایونسین لمیٹیڈ شامل تھیں۔قیمتوں میں اتار چڑھائو کے اعتبا ر سے سیپ ہائر ٹیکس کے حصص کی قیمت76.43روپے کے اضافے سے1100روپے اورفلپ موریس60.20روپے کے اضافے سے1508.20روپے ہوگئی جب کہ کولگیٹ پامولو120روپے کی کمی سے3055روپے اورگیٹرن انڈسٹریز کے حصص 45روپے کی کمی سے 555روپے ہوگئی ۔

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.