جموںو کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے دیرینہ اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی،ترجمان دفترخارجہ

جموںو کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے دیرینہ اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی،ترجمان دفترخارجہ
کنٹرول لائن کے دونوں جانب جانیں بچانے کیلئے جنگ بندی معاہدے پر حقیقی معنوں میںعملدرآمدکی ضرورت ہے،بریفنگ

اسلام آباد(ویب  نیوز)دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چوہدری نے پاکستان اور بھارت کے درمیان 2003 میں طے شدہ جنگ بندی معاہدے پر حقیقی معنوں میں عملدرآمد کرنے پر زور دیا ہے تاکہ کنٹرول لائن کے دونوں جانب جانیں بچائی جا سکیں۔انہوں نے جمعہ کی سہ پہر اسلام آباد میں اپنی ہفتہ وار نیوز بریفنگ کے دوران ایک سوال کے جواب میں کہا کہ پاکستان کو کنٹرول لائن کے دونوں جانب کشمیریوں کی قیمتی جانوں کے ضیاع اور ان کی املاک کو ہونے والے نقصان پر گہری تشویش ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے بے گناہ کشمیریوں کی زندگیوں کے تحفظ کے پیش نظر بھارت کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا ہمیشہ مناسب اور محتاط جواب دیا ہے۔ترجمان نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ جموںو کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے دیرینہ اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور کشمیریوںکی خواہشات کے مطابق پرامن طور پر حل ہوناچاہیے

Comments are closed, but trackbacks and pingbacks are open.