طالبان نے سہیل شاہین کو اپنا سفیر اقوام متحدہ میں نامزدکردیا

وزیر خارجہ مولوی امیر خان متقی کاسیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس کوخط، جنرل اسمبلی سے خطاب کرنے دینے کا مطالبہ

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس کے ترجمان نے طالبان وزیرخارجہ کے خط کی تصدیق کردی

افغانستان کی اقوام متحدہ کی نشست کے لیے درخواست 9 رکنی کمیٹی کو بھیجی گئی ہے جبکہ کمیٹی میں امریکا، چین اور روس شامل ہیں

کمیٹی کا پیرسے پہلے اس معاملے پربیٹھک کا امکان نہیں، شبہ ہے طالبان کے وزیر خارجہ اقوام متحدہ سے خطاب نہ کر سکیں، ترجمان

 

نیویارک (ویب ڈیسک)

طالبان نے اقوم متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کے لئے افغانستان کی نمائندگی کا مطالبہ کرتے ہوئے ترجمان سہیل شاہین کو عالمی ادارے میں اپنا سفیر نامزد کردیا ہے۔عرب میڈیا کے مطابق افغانستان کے وزیر خارجہ مولوی امیر خان متقی نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس کوخط لکھتے ہوئے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرنے دینے کا مطالبہ کیا اور ترجمان سہیل شاہین کو افغانستان کا سفیرنامزدکیا۔عرب میڈیا کے مطابق طالبان کے وزیر خارجہ امیر خان متقی نیاقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کو لکھے گئے خط میں خطاب کرنے کی درخواست کی۔عرب میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس کے ترجمان نے طالبان وزیرخارجہ کے خط کی تصدیق کردی ہے ۔ترجمان کے مطابق افغانستان کی اقوام متحدہ کی نشست کے لیے درخواست 9 رکنی کمیٹی کو بھیجی گئی ہے جبکہ کمیٹی میں امریکا، چین اور روس شامل ہیں۔ترجمان کا کہنا ہے کہ کمیٹی کا پیرسے پہلے اس معاملے پربیٹھک کا امکان نہیں اس لیے شبہ ہے کہ طالبان کے وزیر خارجہ مولوی امیر خان متقی اقوام متحدہ سے خطاب نہ کر سکیں۔ عرب میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کی طرف سے طالبان کے سفیرکو قبول کرنا ایک اہم قدم ہوگا۔واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا سالانہ  اجلاس پیر27ستمبر کو ختم ہوجائے گا۔