نیب کا شہباز شریف کی گرفتاری کیلئے چھاپہ …نیب ٹیم خالی ہاتھ واپس لوٹی

لاہور (صباح نیوز)

آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں عدم پیشی پر قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور کی ٹیم سابق وزیراعلی پنجاب اور قومی اسمبلی کے موجودہ قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی گرفتاری کیلئے ان کی رہائش گاہ پر پولیس کی بھاری نفری کے ساتھ چھاپہ مارا تاہم شہباز شریف گھر میں موجود نہیں تھے۔اطلاعات کے مطابق نیب لاہور کی ٹیم نے ماڈل ٹاون میں شہباز شریف کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا اور تقریبا ڈیڑھ گھنٹے تک گھر کے اندر موجود رہے تاہم انہیں بتایا گیا کہ شہباز شریف گھر میں موجود نہیں ہیں جس کے بعد ٹیم وہاں سے روانہ ہوگئی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اب نیب کی ٹیم نواز شریف کی گرفتاری کیلئے جاتی امرا روانہ ہوئی ہے۔نیب ٹیم کی آمد سے قبل علاقے کو کورڈن آف کردیا گیا تھا اور کارکنوں کو آگے بڑھنے سے روکنے کیلئے پولیس کی بھاری نفری بھی موجود تھی۔اطلاعات کے مطابق نیب کی ٹیم میں تین خواتین اہلکار بھی موجود تھیں جبکہ ٹیم کی سربراہی نیب کے ڈپٹی ڈائریکٹر چوہدری محمد اصغر کررہے تھے۔اطلاع ملتے ہی مسلم لیگ ن کے کارکنان بڑی تعداد میں ماڈل ٹاون میں شہباز شریف کی رہائش گاہ کے باہر جمع ہوگئے اور حکومت کیخلاف نعرے بازی کی۔مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڈ کا کہنا ہے کہ شہبازشریف کوگرفتارکرنے کا کوئی جوازنہیں، نیب نے 28 مئی کا دستخط شدہ گرفتاری کا وارنٹ دکھایا۔عطاتارڑ نے بتایا کہ  شہبازشریف کی گرفتاری کا نہ کوئی اخلاقی جوازہے اورنہ قانونی، ایک کیس میں ایک شخص کی دوبار گرفتاری کیسیممکن ہے؟ عطا اللہ تارڑ نے کہا کہ آج نیب میں تحریری جواب جمع کرایا، ہم نے نیب کو کہا کہ ہم وڈیو لنک پر موجود ہیں، نیب کو ہر سوال کا تفصیلی جواب جمع کرایا ، ہم ڈٹ کر کھڑے ہیں، آدھی پارٹی حکومت نے بند کی، ہماری آدھی پارٹی تقریبا جیل کاٹ آئی ہے، ہم ڈٹ کر ان کا مقابلہ کریں گے۔عطا اللہ تارڑ نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت سیاسی انتقام لے رہی ہے، نیب اور نیازی کا گٹھ جوڑ سامنے آگیاہے، کل ہائیکورٹ میں 12 بجے شہباز شریف کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوگی، تمام قانونی آپشنز دیکھ رہے ہیں۔وزیر اطلاعات پنجاب فیاض چوہان کا کہنا ہے کہ نیب کی کارروائی کو وزیراعظم عمران خان سے جوڑنے کی کوشش کی جارہی ہے، نیب احتساب کا آزاد ادارہ ہے، شہبازشریف کی گرفتاری سے وفاقی اورصوبائی حکومت کا کوئی لینا دینا نہیں۔پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثنا نے کہا ہے کہ شہبازشریف کی درخواست کل سماعت کے لیے مقررہوگئی ہے، مجھے معلوم نہیں شہبازشریف کہاں ہیں۔رانا ثنا اللہ نے کہا کہ شہبازشریف کل عدالت میں 11 بجے پیش ہوں گے، شہبازشریف کیس میں پیش ہونے کیلئے لندن سے نہیں آئے، کورونا وبا کی روک تھام کے سلسلے میں نوازشریف کی ہدایت پرشہبازشریف لندن سیواپس آئے ہیں۔خیال رہے کہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف منگل کو قومی احتسا ب بیورو (نیب)میں پیش نہیں ہوئے بلکہ تفصیلی جواب جمع کرادیا۔نیب آفس لاہور میں شہباز شریف کی پیشی کیلئے کورونا سے بچا کے خصوصی انتظامات کیے گئے تھے تاہم شہباز شریف پیش نہیں ہوئے۔اپوزیشن لیڈرشہباز شریف نے نیب میں جواب جمع کرادیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس اس وقت اپنے عروج پر ہے، نیب کے کچھ افسران بھی کورونا کا شکار ہوچکے ہیں۔شہبازشریف نے کہا کہ میری عمر 69 سال ہے اور کینسر کا مریض بھی ہوں، نیب تحقیقاتی ٹیم مجھ سے اسکائپ کے ذریعے سوالات کرسکتی ہے۔

Editor

Next Post

ملک میں کورونا سے مزید 78 ہلاکتیں، 3902 نئے کیسز رپورٹ

منگل جون 2 , 2020
اسلام آباد(صباح نیوز) ملک میں کورونا سے مزید 78 افراد انتقال کرگئے جس کے بعد اموات کی مجموعی تعداد 1652 ہوگئی جب کہ نئے کیسز سامنے آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 78249 تک پہنچ گئی ہے۔اب تک سندھ میں 526 اور پنجاب میں کورونا سے 540 افراد انتقال کرچکے […]