پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں ایک روزہ تیزی کے بعد منگل کو مندی کا رجحان

کراچی :اسٹاک مارکیٹ میں ایک روزہ تیزی کے بعد مندی کا رجحان

کرونا وائرس کیسز بڑھنے کے پیش نظر لاک ڈاون کے خدشات کے باعث سرمایہ کاروں نے حصص فروخت کو ترجیح دی

کے ایس ای100انڈیکس 389.90پوائنٹس کی کمی سے45292.87پوائنٹس کی سطح پر آ گیا

کراچی( ویب  نیوز)پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں ایک روزہ تیزی کے بعد منگل کو مندی کا رجحان غالب آگیا اور کرونا وائرس کیسز بڑھنے کے پیش نظر لاک ڈاون کے خدشات کے باعث سرمایہ کاروں نے حصص فروخت کو ترجیح دی جس کے نتیجے میں کے ایس ای100انڈیکس 389.90پوائنٹس کی کمی سے45292.87پوائنٹس کی سطح پر آ گیا جب کہ 47.59فیصد کمپنیوں کے شیئرز کی قیمتوں میںکمی ریکارڈکی گئی جس سے سرمایہ کاروں کو54ارب17کروڑ  روپے سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑا اورحصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بھی پیرکی نسبت 10.33فی صدکم رہا۔ منگل کوٹریڈنگ کا آغاز مثبت زون میں ہوا اور سرمایہ کاروں کی جانب سے منافع بخش کمپنیوں کے شیئرز کی خریداری میں دلچسپی لی گئی جس کے باعث ابتدائی اوقات میں تیزی کا رجحان رہا اوردوران ٹریڈنگ کے ایس ای100انڈیکس 45936پوائنٹس کی بلند سطح پرگیاتاہم بعد ازاں  متوقع لاک ڈاون  سے کاروبار متاثر ہونے کے خدشات کے باعث حصص فروخت کا دباو بڑھ گیا اور مارکیٹ میں مندی چھاگئی جس کے سبب انڈیکس 45161پوائنٹس کی نچی سطح پر آگیا بعد میں ریکوری آئی لیکن مندی کا رجحان غالب رہا اور کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس 389.90پوائنٹس کی کمی سے45292.87پوائنٹس کی سطح پربند ہواجب کہ کے ایس ای30انڈیکس217.01پوائنٹس کی کمی سے18580.29پوائنٹس ،کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس210.73پوائنٹس کی کمی سے 30635.26پوائنٹس اور کے ایم آئی30انڈیکس1236.28پوائنتس گھٹ کر73392.33پوائنٹس کی سطح پرآ گیا ۔گزشتہ روز مجموعی طورپر395کمپنیوں کے شیئرز کا کاروبار ہوا جن میں 188کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ 191میں کمی اور16میں استحکام رہا۔مندی کے باعث مارکیٹ کا مجموعی سرمایہ54ارب17کروڑ78لاکھ95 ہزار640روپے گھٹ کر78کھرب77ارب6کروڑ48لاکھ88ہزار447 روپے رہ گیا ۔سرگرم کمپنیوں میں ٹیلی کارڈ لمٹیڈ،یونٹی فوڈز،فلائنگ سیمینٹ ،ٹی آر جی پاکستان،ازگارڈ نائن، ورلڈکال ٹیلی کام،بل گلاس،کے الیکٹرک،پاکستان انٹرنیشنل بلک اورغنی گلوبل گلاس شامل ہیں۔گزشتہ روز نمایاں کاروباری سرگرمیوں کے لحاظ سے رفحان میظ 100روپے کے اضافے سے9899روپے اورنیسلے پاکستان90.50روپے کے اضافے سے5840.50روپے ہوگئی جب کہ پاک ٹوبیکو38.01روپے کی کمی سے1499.99روپے اورشیزان انٹر26.52روپے کی کمی سے327.14روپے ہوگئی۔